11 اضلاع میں انسداد پولیو مہم کا دوسرا مرحلہ پیر سے شروع ہوگا

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

خیبر پختونخوا کے 11 اضلاع میں پانچ روزہ خصوصی انسداد پولیو مہم کے دوسرے مرحلے کا آغاز 2 دسمبر 2019 سے کیا جا رہا ہے۔

مہم کا فیصلہ تور غراور شانگلہ سے سامنے آنے والے پولیو کیسز کو مدنظر رکھ کر کیا گیا ہے۔

انسداد پولیو مہم ضلع تورغر، کوہستان بالا، کوہستان پایاں، کولئی پالاس، شانگلہ، بٹگرام، ایبٹ آباد، مانسہرہ، ہری پور، چارسدہ اور مہمند میں پیر کے روز سے شروع ہونے والی یہ خصوصی مہم جمعرات 5 دسمبر 2019 تک جاری رہے گا جس کے بعد 5ویں دن رہ جانے والے بچوں کو پولیو قطرے پلوانے کا کام جاری رکھا جائے گا۔

ان 11 اضلاع میں 5 سال سے کم عمر کے کل 1193615 بچوں کو 5220 ٹیموں کی مدد سے پولیو قطرے پلوائیں جائیں گے جن میں 4534 موبائل ٹیمیں، 453 فکسڈ ٹیمیں، 195 ٹرانزٹ ٹیمیں اور 38 رومنگ ٹیمیں شامل ہیں۔

دوسری جانب کمشنر پشاور شہاب علی شاہ نے ڈپٹی کمشنر چارسدہ اور مہمند سمیت دیگر متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ ہے ان ضلاع کی مخصوص یونین کونسلوں میں شروع ہونے والی خصوصی انسداد پولیو مہم کو کامیاب بنانے اور اس کے 100 فیصد اہداف کے حصول کو یقینی بنانے کے لئے تمام تر ضروری اقدامات اٹھائے جائیں۔

جمعہ کے روز اپنے دفتر میں انسداد پولیو سے متعلق ڈویژنل ٹاسک فورس کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے انہوں نے حکام کو مزید ہدایت کی کہ اس پولیو مہم کے دوران ان یونین کونسلوں میں پانچ سال تک کے تمام بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے یقینی پلائے جائیں اور اس سلسلے میں انکاری والدین کے بچوں اور سفر کرنے والے بچوں پر خصوصی توجہ دی جائے تاکہ کوئی بھی بچہ ان قطروں سے محروم نہ رہے۔

اجلاس میں ان علاقوں میں چلائی جانے والی گزشتہ انسداد پولیو گزشتہ مہم کے مختلف پہلوؤں اور آنے والی مہم کی تیاریوں کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔

ڈپٹی کمشنر چارسدہ اور ڈپٹی کمشنرز مہمند کے علاوہ محکمہ صحت، پولیس، سکیورٹی اور دیگر متعلقہ اداروں کے نمائندوں نے جلاس میں شرکت کی۔

کمشنر پشاور نے ڈپٹی کمشنرز اور دیگر متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ اضلاع اور یونین کونسل کے سطح پر مائیکرو پلان تیار کریں تاکہ کوئی بھی بچہ پولیو ویکسین سے رہ نہ جائے۔

واضح رہے کہ پاکستان میں رواں برس 100 افراد کا شکار کر کے پولیو وائرس نے سنچری مکمل کرلی, ملک بھر میں اب تک پولیو ٹائپ ون اور تھری کے 91 جبکہ پولیو ٹائپ ٹو کے 9 کیسز سامنے آچکے ہیں۔