یو ایس ایڈ : بزنس پروپوزل ٹریننگ کے ذریعے 50 کاروباری خواتین کو بااختیار بنا دیا گیا

خیبرپختونخوا اور اس کے نئے ضم شدہ اضلاع میں یو ایس ایڈ کے اقتصادی بحالی و ترقی پروگرام نے کاروباری خواتین اور سٹارٹ اپ کے استعداد کار بڑھانے کئلیے دو روزہ تربیتی پروگرام کا اہتمام کیا۔ جس کا مقصد کاروباری خواتین کو سرمائے کے حصول کئلیے قابل بنانا تھا، اور کاروبار کے فروغ اور ترقی کئلیے سرمائے کے ذرائع تک رسائی اور انکی ضروریات کے مطابق پروپوزل بنانے کا ہنر سکھانا تھا۔

خیبر پختونخوا میں کاروباری خواتین کے پاس صلاحیتوں کی کمی نہیں ہے، لیکن انہیں مختلف مشکلات کا سامنا ہے جن میں فنانس تک محدود رسائی اور سرمائے کے حصول کئلیے پروپوزل لکھنے کی ناکافی مہارت جیسے مشکلات شامل ہیں۔

یہ تربیت کاروباری خواتین کے زیرقیادت اداروں کو بہترین کاروباری تجاویز تیار کرنے کے لیے بااختیار بناتی ہے، اور اپنے کاروبار کو وسعت اور فنڈنگ حاصل کرنے کے قابل بناتی ہے۔

وومن چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز کی نائب صدر انیلہ خالد نے کہا کہ خیبرپختونخوا میں خواتین کاروباری افراد اور ضم شدہ اضلاع کو فنڈ تک محدود رسائی سمیت مشکلات کا سامنا ہے۔ USAID-ERDA کی ‘بزنس پروپوزل رائٹنگ’ ٹریننگ اس خلا کو پورا کرنے کی جانب ایک اہم قدم ہے۔ اور خواتین کو بااختیار بنانا بھی تاکہ وہ اپنے کاروباری سفر میں حائل رکاوٹوں کو دور کر سکیں۔”

”چیف آف پارٹی، USAID-ERDA، شاد محمد نے کہا کہ، ہمارا مقصد خیبر پختونخواہ اور نئے ضم شدہ اضلاع میں کاروباری خواتین کاروباریوں اور سٹارٹ اپس کے تکنیکی مہارت اور صلاحیت کو بڑھانا ہے، ہمیں یقین ہے کہ یہ تربیت کاروبار میں خواتین کی شرکت کو فروغ دے کر معاشی ترقی میں معاون ثابت ہو گی۔ ”

تربیت حاصل کرنے والی خاتون اور Plastibility بزنس کی مالک سکینہ آفریدی نے کہا کہ ٹرینگ نے ہمیں اپنے کاروباری خیالات کو مؤثر طریقے سے بیان کرنے کے لیے مفید معلومات فراہم کی ہے۔ میں اب اپنے کاروبار کو بڑھانے کے لیے مالیاتی اداروں سے رابطہ کرنے میں زیادہ پر اعتماد محسوس کرتی ہوں۔

ان ناگزیر مہارتوں کی فراہمی کے ذریعے، USAID-ERDA خیبر پختونخواہ اور ضم شدہ اضلاع میں کاروبار کرنے والی خواتین کو بااختیار بنانے، ان کی صلاحیتوں کو بڑھانے اور صوبے کی معاشی ترقی کو میں کردار ادا کرنے کے اہل بنایا۔