اسلام میں انتہا پسندی کی کوئی گنجائش نہیں، جنرل عاصم منیر

آرمی چیف جنرل عاصم منیر کا کہنا ہے کہ اسلام امن و آشتی کا مذہب ہے، اسلام میں انتہا پسندی کی کوئی گنجائش نہیں. انہوں نے دو ٹوک الفاظ میں واضح کیا کہ مہذب معاشرے میں کسی کو قانون اپنے ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر ) کے مطابق آرمی چیف جنرل عاصم منیر سے چرچ آف پاکستان اور بشپ آف ریونڈ کے ناظم و صدر ڈاکٹر آزاد مارشل کی سربراہی میں مسیحی برادری کے 13 رکنی وفد نے جی ایچ کیو میں ملاقات کی۔

ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور، مذہبی اور بین المذاہب ہم آہنگی کے پہلوؤں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

آرمی چیف جنرل عاصم منیر نے قومی ترقی میں مسیحی برادری کے کردار کو سراہا، انہوں نے بالخصوص معیاری تعلیم، صحت عامہ اور فلاحی خدمات سمیت مادر وطن کے دفاع کیلئے مسیحی برادری کے شاندار کردار کی تعریف کی۔

انہوں نے مسیحی برادری کیلئے بھرپور احترام کا اظہار کرتے ہوئے قائداعظم کے متحد اور ترقی پسند پاکستان کے حقیقی وژن پر عمل کرنے کیلئے معاشرے میں بین المذاہب ہم آہنگی کو فروغ دینے کی ضرورت پر زور دیا۔

مسیحی برادری کے ارکان نے دہشتگردی سے نمٹنے اور ملک میں اقلیتوں کو محفوظ ماحول فراہم کرنے میں پاک فوج کی کاوشوں کو سراہا۔ انہوں نے آرمی چیف کے اقلیتوں کو زیادہ سے زیادہ فعال بنانے اور ایک مربوط اور معاشرے میں ان کا اعتماد بحال کرنے کیلئے کیے گئے اقدامات کو سراہا۔