پاک فوج کی کاوشوں سے ضلع کرم میں 16 سال بعد کوئلہ کان کنی کا آغاز

پاک فوج کی کاوشوں سے ضلع کرم میں 16  سال بعد کوئلہ کان کنی کاآغاز کردیا گیا ، کوئلہ نکالنےکی وجہ سے روزگارکی تعداد میں اضافہ ہو نے لگا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاک فوج کی کاوشوں سے ضلع کرم میں کوئلہ کان کنی کا آغاز کر دیا گیا، ضلع کرم میں انسداد دہشتگردی کیلئے فورسز کی کارروائیوں کو نظراندازنہیں کیا جا سکتا۔

مقامی معیشت کو تقویت کیلئے وسطی کرم میں سولہ سال بعد کوئلہ کانوں سے استخراج کا آغاز ہوا ہے، ایک سو ستر کانوں میں سے باسٹھ سے کوئلہ نکالنے کا کام کامیابی سے جاری ہے۔

کانوں سے کوئلہ نکالنے کی وجہ سےروزگارکی تعدادمیں اضافہ ہو رہا ہے اور کان کنی سرگرمیوں کےسبب تقریباً5 ہزار سے زائد ملازمتوں کے مواقع پیدا ہوئے ہیں۔

ضلع کرم میں کوئلے کی کان کنی فعال ہونے پر مقامی لوگ بہت خوش اور مطمئن ہیں، ان کا کہنا ہے کہ کان کنی کی وجہ سے ذخائر کا صحیح استعمال کیا جارہا ہے جو کسی نعمت سے کم نہیں۔

علاقے میں قیام امن اور کان کنی کے ذخائر کے صحیح استعمال پر مقامی افراد نے فورسز کا شکریہ اداکیا، مقامی مزدوروں کا کہنا ہے کہ 20سال سےیہاں کام کررہاہوں،سیکیورٹی اداروں کےتعاون سے علاقہ محفوظ ہے، سیکیورٹی فورسزکی وجہ سےہمیں یہاں پر روزگار کے مواقع فراہم کیےگئےہیں ، ہم سیکیورٹی فورسز کا تہہ دل سےشکریہ ادا کرتے ہیں