شمالی وزیرستان میں مزدوروں پر حملے پرعلمائے کرام کا ردعمل

شمالی وزیرستان میں مزدوروں پر حملے پر  علمائے کرام نے  ردعمل کا اظہار کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق علمائے کرام نے شمالی وزیرستان کی تحصیل شوال میں خوارجیوں کے ہاتھوں 11 مزدوروں کی ہلاکت کی بھرپور مذمت، بے گناہ مسلمانوں کا قتلِ عام کرنے والے انسان بھی کہلانے کے لائق نہیں۔

علامہ عابد حسین شاکری نے کہا کہ اسلام اور انسانیت میں ایسی کارروائیوں کی قطعاً گنجائش نہیں ہے، مولانا ڈاکٹر عطاالرحمن نے قرار دیا کہ بم دھماکے میں زخمی اور شہید مزدوروں کے سانحے کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔

مولانا شیخ عبیدالرحمن نے کہا کہ دہشت گردوں کی جانب سے کئے گئے واقعے کی پرزور مذمت کرتے ہیں، مولانا معراج الدین سرکانی کا کہنا تھا کہ خوارجیوں نے ان مسلمانوں کو نشانہ بنایا، جو رزق حلال کے لیے نکلے تھے۔

مولانا عمر بن عبدالعزیز نے کہا کہ میں سمجھتا ہوں اس واقعے کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے، ان کارروائیوں کے مرتکب مسلمان کیا انسان کہلانے کے بھی لائق نہیں ہیں، مولانا محمد شعیب کا کہنا تھا کہ اس دہشتگری کے خلاف ہم سب جو متحد ہونا ہے اور افواجِ پاکستان اور حکومت کا ساتھ دینا چاہیے۔

مولانا ڈاکٹر عبدالناصر نے قرار دیا کہ دہشت گردی کے واقعے پر دل انتہائی غمگین ہے، اسلام کی رو میں ایسے واقعات بالکل حرام ہیں، مولانا طیب قریشی نے کہا کہ بے گناہ مسلمانوں کا قتلِ عام کرنے والے انسان بھی کہلانے کے لائق نہیں ہیں۔