مردم شماری کے نتائج کی منظوری کیلئے اجلاس بلانے کی سمری ارسال

وزارت منصوبہ بندی اور ترقی نے 2023ء میں ہونے والی پہلی ڈیجیٹل آبادی اور ہاؤسنگ مردم شماری کی منظوری کیلئے مشترکہ مفادات کی کونسل (سی سی آئی) کا اجلاس بلانے کیلئے سمری ارسال کی ہے۔

پاکستان بیورو آف اسٹیٹسٹکس (محکمہ شماریات) نے مردم شماری مکمل کرکے اس کے نتائج بھی مکمل کر لئے ہیں، جنہیں اب منظوری اور رہنمائی کیلئے سی سی آئی کو بھیجا گیا ہے۔

اعلیٰ سرکاری ذرائع نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ وزارت منصوبہ بندی کی طرف سے بھیجی گئی سمری کے ذریعے سی سی آئی سیکرٹریٹ/کیبنٹ ڈویژن کو آگاہ کیا گیا ہے کہ مردم شماری کا تمام کام مکمل کر لیا گیا ہے۔

سرکاری سمری تیار کرنے اور پھر ارسال کرنے کا فیصلہ واضح طور پر ظاہر کرتا ہے کہ حکومت اپنی مدت پوری ہونے سے قبل سی سی آئی کا اجلاس بلانے کیلئے پوری طرح تیار ہے۔

اس سے قبل سی سی آئی کا اجلاس 2 اگست 2023ء کو منعقد کرنے پر بات ہوئی تھی، تاہم ایسا نہ ہوسکا، لیکن اب نتائج کی منظوری کیلئے سمری سی سی آئی کو بھیج دی گئی ہے، جس سے آئندہ عام انتخابات کے انعقاد کے حوالے سے وزیراعظم شہباز شریف کے تازہ ترین بیان کے بعد پیچیدگیاں پیدا ہوں گی۔

مردم شماری کے نتائج پیش کئے جانے کے حوالے سے تین امکانات پیدا ہوسکتے ہیں یا تو تمام اسٹیک ہولڈرز کی جانب سے کی گئی سنگین خامیوں کی بنا پر نتائج منسوخ کر دیئے جائیں گے یا پھر نتائج کی منظوری کے بعد حلقہ بندیاں کرانے کے نتیجے میں تاخیر ہوسکتی ہے۔

تیسرا امکان یہ ہوسکتا ہے کہ ایک کمیٹی تشکیل دے کر تمام معاملات کو مناسب انداز سے اس انداز سے حل کیا جائے، جو تمام اسٹیک ہولڈرز کیلئے قابل قبول ہو۔