قومی اسمبلی اجلاس حکومتی مدت پوری ہونے تک جاری رکھنے کا فیصلہ

قومی اسمبلی کی ہاؤس بزنس ایڈوائزری کمیٹی کا اجلاس پارلیمنٹ ہاؤس میں ہوا، جس کی صدارت سپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف نے کی۔

اجلاس میں وفاقی وزراء رانا تنویر حسین، مرتضیٰ جاوید عباسی اور ممبران قومی اسمبلی مولانا عبدالاکبر چترالی، انجینئر صابر حسین قائم خانی، چودھری برجیس طاہر، شاہدہ اختر علی، چودھری حامد حمید، رانا قاسم نون، آغا رفع اللہ، ڈاکٹر رمیش کمار، سیکرٹری قومی اسمبلی طاہر حسین اور ایڈیشنل سیکرٹری قانون سازی محمد مشتاق نے شرکت کی۔

ایڈوائزری کمیٹی کے شرکاء نے طارق فضل چودھری کے بیٹے کے انتقال پر دکھ و افسوس کا اظہار کیا اور مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی بھی کی گئی، اس موقع پر قومی اسمبلی کے اجلاس کے ایجنڈے اور دورانیے پر مشاورت کی گئی، کمیٹی نے اسمبلی کی مدت پوری ہونے تک اجلاس جاری رکھنے کا فیصلہ کیا۔

کمیٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ 15 ویں قومی اسمبلی کی مدت پوری ہونے سے قبل اہم قانون سازی اور ایوان کی کارروائی میں نمایاں حصہ لینے والے ممبران اور عملے کی کارکردگی کو سراہا جائے گا اور اعزازی شیلڈ سے بھی نوازا جائے گا، قومی اسمبلی کے موجودہ اجلاس میں ممبران قومی اسمبلی الوداعی تقاریر بھی کریں گے۔

رواں اجلاس میں وقفہ سوالات کے علاوہ قانون سازی کی جائے گی اور عوامی اہمیت کے حامل ایشوز کو زیر بحث لایا جائے گا، اجلاس میں پرائیویٹ ممبر بلز کو بھی زیر غور لانے کا فیصلہ کیا گیا، قومی اسمبلی کے اختتامی اجلاس کے دوران ممبران کا روایتی گروپ فوٹو بھی ہوگا۔

سپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف نے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کی 15 قومی اسمبلی اپنی مدت پوری کرنے جا رہی ہے، اللہ تعالیٰ کا شکر ہے کہ پاکستان کی 15 ویں قومی اسمبلی جمہوری انداز میں اپنی مدت پوری کر رہی ہے۔