حکومت سیاسی انتقام کے مقدمات بنائے گی تو لوگوں کا اعتماد اٹھ جائیگا، پشاور ہائیکورٹ

پشاور ہائیکورٹ کے جسٹس اعجاز انور نے ریمارکس دیئے ہیں کہ اگر حکومت مخالفین پر سیاسی انتقام کے لیے انٹی کرپشن کے مقدمات بنائے گی تو پھر لوگوں کا اس پر سے اعتماد اٹھ جائے گا۔

تحریک انصاف کے سابق رکن قومی اسمبلی انور تاج اور سابق اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کے بھائی تحصیل مئیر صوابی عطااللہ کے خلاف درج مقدمات کی تفصیلات کے لیے دائر درخواست پر سماعت پشاور ہائیکورت کے جسٹس اشتیاق ابراہیم اور اعجاز انور پر مشتمل 2 رکنی بینچ نے کی۔

دوران سماعت درخواست گزاروں کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ ان کے موکلوں کے خلاف مختلف مقامات پر مقدمات درج کیے گئے ہیں تاہم انہیں کوئی تفصیلات فراہم نہیں کی جارہیں، جس کے خلاف انہوں نے عدالت سے رجوع کیا ہے۔

سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ تحریک انصاف کے سابق ایم این اے انور تاج کے خلاف چارسدہ اور مردان میں اینٹی کرپشن کا ایک مقدمہ اور پولیس کے 3 مقدمات ہیں جب کہ تحصیل مئیر صوابی عطااللہ کے خلاف انٹی کرپشن میں ایک شکایت ہے۔

جسٹس اعجاز انور نے کہا کہ  اگر حکومت مخالفین پر سیاسی انتقام کے لیے انٹی کرپشن کے مقدمات بنائے گی تو پھر لوگوں کا اس پر سے اعتماد اٹھ جائے گا۔ عدالت نے تفصیلات فراہم کرنے کے بعد رِٹ درخواستیں نمٹا دیں۔