پاکستان بھر میں 7 جولائی کو یوم قرآن منایا جائے گا

حکومت نے 7 جولائی کو یوم تقدس قرآن منانے کا فیصلہ کیا ہے اور اس روز سویڈن واقعے کے خلاف ملک گیر احتجاج ہوگا۔

وزیراعظم شہبازشریف کی زیرصدارت اہم اجلاس ہوا، جس میں سویڈن میں قرآن کریم کی بے حرمتی کے معاملے پر غور کیا گیا گیا۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ 7 جولائی (جمعہ) کو ملک بھر میں یوم تقدس قرآن منانا جائے گا اور سویڈن واقعے کے خلاف ملک گیر بھرپور احتجاج ہوگا۔

وزیراعظم شہبازشریف نے تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں سمیت پوری قوم کو احتجاج میں شریک ہونے کی اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ پوری پاکستانی قوم ایک زبان ہوکر شیطانی ذہنوں کو پیغام دے گی، جمعہ کو ملک بھر میں سویڈن واقعے کی مذمت میں احتجاجی ریلیاں نکالی جائیں۔

دوسری جانب وزیراعظم شہبازشریف نے جمعرات کو پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس بلانے کا بھی فیصلہ کیا، اور کہا کہ اجلاس میں سویڈن واقعے پر قومی لائحہ عمل مرتب کیا جائے، اور پارلیمنٹ کے فورم سے قوم کے جذبات اور احساسات کی بھرپور ترجمانی کی جائے، اجلاس میں مشترکہ قرارداد منظور کی جائے۔

وزیراعظم نے مسلم لیگ (ن) کو جمعہ کے دن یوم تقدیس قرآن میں بھرپور شرکت کی ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا کہ ملک بھر میں احتجاجی ریلیاں نکالی جائیں۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ قرآن کریم کی عزت وحرمت ہمارے ایمان کا حصہ ہے، اس کے لئے ہم سب ایک ہیں، گمراہ ذہن اسلاموفوبیا کے منفی رجحان کو پھیلا کر مذموم ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں۔

وزیراعظم نے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ دنیا بھر کی امن پسند، بقائے باہمی پر یقین رکھنے والی اقوام اور قیادت اسلامو فوبیا کا شکار اور مذہبی تعصبات کی حامل متشدد قوتوں کا راستہ روکیں۔

وزیراعظم نے مزید کہا کہ مذہب، مقدس ہستیوں، عقائد اور نظریات کو نشانہ بنانے والے متشدد ذہن دنیا کے امن کے لئے خطرہ ہیں، عالمی سطح پر پرامن، متوازن اور بین المذاہب ہم آہنگی پر یقین رکھنے والی قوتیں مل کر ایسے رجحانات اور واقعات کے تدارک کے لئے کام کریں۔