بچے کی پیدائش پر والد کو تنخواہ اور چھٹی، صدر مملکت نے بل کی توثیق کردی

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے بچے کی پیدائش پر چھٹی کے بل 2023 کی توثیق کردی۔

بل کے مطابق وفاقی اداروں کی ملازمین سروس میں3 بارمکمل تنخواہ کے ساتھ زچگی کی چھٹی لے سکیں گے۔

بل کے تحت خواتین ملازمین پہلی بار180 دن، دوسری بار120 دن زچگی کی چھٹی لے سکیں جبکہ تیسری بار خواتین کو 90 دن کی چھٹی مل سکے گی۔

مرد ملازمین پوری سروس کے دوران تین تین بار 30 دن کی چھٹی لے سکیں گے۔

قانون کا اطلاق وفاقی حکومت کے زیرانتظام تمام سرکاری اور نجی اداروں پر ہوگا، خلاف ورزی پر 6 ماہ تک قید یا ایک لاکھ روپے تک جرمانہ یا دونوں سزائیں دی جاسکیں گی۔

واضح رہے کہ یہ بِل قرۃ العین مری نے سینیٹ میں 12 نومبر 2018 کو پیش کیا تھا۔

اس وقت کی حکومت نے اس بل کی مخالفت کی تھی۔ اس کے باوجود سینیٹ نے یہ بل منظور کر لیا تھا لیکن بعد میں یہ بل قومی اسمبلی سے منظور نہ ہو سکا۔

حکومت کی تبدیلی کے بعد بِل کی محرک قرۃ العین مری ایک بار پھر متحرک ہوئیں اور انہوں نے قومی اسمبلی سے بھی بل کی منظوری حاصل کی۔

صدر کی توثیق کے بعد یہ باضابطہ طور ایکٹ بن گیا ہے۔