سمندری طوفان آج کیٹی بندر سے ٹکرائے گا، سندھ سے 81 ہزار افراد کی نقل مکانی

سمندری طوفان ” بپر جوائے ” آج دوپہر کو کیٹی بندر سے ٹکرائے گا۔ این ڈی ایم اے کے مطابق سندھ میں 81 ہزار افراد کو محفوظ مقامات کی طرف منتقل کر دیا گیا ہے۔

این ڈی ایم اے کے مطابق بپر جوائے گذشتہ چھ گھنٹوں سے شمال مشرق کی جانب بڑھ رہا ہے، سمندری طوفان کراچی کے جنوب سے 247 کلومیٹر دور ہے، سمندری طوفان کیٹی بندر سے 178 کلومیٹر دور ہے۔

این ڈی ایم اے کے مطابق سمندری طوفان کے مرکز اور اطراف میں ہوا کی رفتار 160 کلومیٹر فی گھنٹہ ہے جبکہ طوفان کے مرکز کے اطراف سمندر میں شدید طغیانی ہے اور طوفان کے مرکز کے گرد لہریں 30 فٹ تک بلند ہو رہی ہیں۔

این ڈی ایم اے کے مطابق 15جون کی دوپہر طوفان کیٹی بندر اور انڈین گجرات کے درمیان سے گزرے گا، طوفان ساحل سے ٹکرانے کے وقت ہواؤں کی رفتار 100 سے 120 کلو میٹر فی گھنٹہ ہو سکتی ہے جبکہ 140 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے تیز آندھی بھی چل سکتی ہیں۔

این ڈی ایم اے کے مطابق سمندری طوفان کے ممکنہ اثرات سے تھرپارکر، بدین اور ٹھٹھہ کے اضلاع اور کراچی ڈویژن میں بارش کا امکان ہے۔ این ڈی ایم اے کا کہنا ہے کہ اب تک 81 ہزار سے زائد افراد کو محفوظ مقام پر منتقل کر دیا گیا ہے۔

ادھر پی ڈی ایم اے سندھ کے مطابق مقامی انتظامیہ کی جانب سے 75 کے قریب ریلیف کیمپس لگائے گئے ہیں۔ پاک فوج، نیوی اور رینجرز کی مدد سے ٹھٹھہ، سجاول، بدین سے اب تک تقریباً 73 ہزار افرادکو محفوظ کیمپوں میں منتقل کر دیا گیا ہے۔

کیمپوں میں خوراک و طبی سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں اور تمام متعلقہ ادارے طوفان کے ممکنہ اثرات کے پیش نظر ہائی الرٹ پر ہیں۔