کراچی میں کالعدم ٹی ٹی پی کے 2 دہشت گرد گرفتار

ایس آئی یو اور سی آئی اے نے مشترکہ کارروائی میں کالعدم ٹی ٹی پی کے خطرناک دہشت گرد گرفتار کرلئے۔ کراچی میں ایس آئی یو اور سی آئی اے نے مشترکہ کارروائی کرتے ہوئے کالعدم ٹی ٹی پی کے 2 کارندے گرفتار کرلئے۔

گرفتار دہشت گردوں میں محمد کمال اور عبدالقادر شامل ہیں اور دونوں دہشت گرد قتل اور بھتہ خوری میں ملوث ہیں۔ ترجمان ایس آئی یو نے مزید بتایا کہ گرفتار ملزمان انتہائی خطرناک مجرم ہیں، انہوں نے افغانستان میں موجود قیادت کے حکم پر قتل اور بھتہ خوری کے انکشافات کئے ہیں۔

ایس آئی یو کے مطابق گرفتار دہشت گردوں نے کراچی صدر کے ایک تاجر سے ٹی ٹی پی کے لیے بھتہ طلب کیا، جس کا مقدمہ تھانا پریڈی میں زیر تفتیش رہا۔

ترجمان نے بتایا کہ دہشت گردوں نے بھتہ نہ دینے پر بنارس میں قیوم گوشت والے کو دیگرساتھیوں کے ساتھ مل کر قتل کیا، اس کے علاوہ دہشت گردوں نے بنارس میں بیف سینٹر اور پینٹ والے سے بذریعہ پرچی بھتہ طلب کیا۔

ترجمان نے مزید بتایا کہ گرفتار دہشت گردوں نے گلشن معمار میں افغان شہری سعید احمد کو شک کی بنیاد پر قتل کیا، دہشت گردوں کو شبہ تھا کہ سعید طالبان کی امریکی ایجنسی کیلئے مخبری کرتا تھا، اس قتل پر ان کی قیادت نے افغانستان سے بطور انعام 20 لاکھ روپے بطور انعام بھیجے، جو انہوں نے آپس میں تقسیم کرلی تھی۔

ایس ایس پی جنید شیخ کا کہنا تھا کہ دہشت گردوں کے انکشافات سے متعلقہ تھانہ جات کو مطلع کردیا گیا ہے۔