پشاور دھماکے میں ٹی این ٹی دھماکہ خیز مواد استعمال کیا گیا

پشاور دھماکے کی مزید تفصیلات سامنے آگئیں، جس کے مطابق دھماکے میں ٹی این ٹی دھماکا خیز مواد استعمال کیا گیا۔

خودکش بمبار نے مسجد کے پُرانے حصے میں دھماکا کیا، مسجد کے پُرانے حصے میں کوئی پِلر موجود نہ تھا اور دیواریں صرف اینٹوں کے سہارے کھڑی کی گئی تھیں۔ دھماکے کی وجہ سے دیواریں اور چھت گرنے سے زیادہ تر شہادتیں ہوئیں۔

دوسری جانب، خودکش بمبار اور نیٹ ورک کی تفصیلات بھی حاصل کر لی گئی ہیں جبکہ نیٹ ورک تک رَسائی حاصل کی جا رہی ہے۔

واضح رہے کہ پشاور میں قائم پولیس لائنز کی مسجد میں عین نماز ظہر کے وقت خودکش دھماکا ہوا تھا جس میں پولیس افسران و اہلکاروں سمیت 84 نمازی شہید ہوئے تھے۔

دھماکے کی ذمہ داری کالعدم تحریک طالبان کے خراسانی گروپ نے قبول کی تھی۔