قبائلی اضلاع : مقبوضہ کشمیرکے عوام پرجاری ظلم وستم کے خلاف نعرے

ملک کے دیگرحصوں کی طرح قبائلی اضلاع میں بھی لوگ کشمیری عوام سے یکجہتی کے لیے سڑکوں پرنکل آئے۔ قبائلی اضلاع کے عوام نے ریلیاں نکالی اور مقبوضہ کشمیرکے عوام پرجاری ظلم وستم کے خلاف نعرے لگائے۔

خیبر

ضلع خیبر کے تینوں بڑے بازاروں لنڈی کوتل، باڑہ اورجمرود بازاروں میں یکجہتی کشمیرریلیاں نکالی گئی۔ ڈپٹی کمشنر محموداسلم وزیر کی قیادت میں جمرود بازار میں ریلی نکالی گئی۔ ریلی میں قبائلی عمائدین مختلف سیاسی پارٹیوں کے کارکنوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔

شرکاء نے اے سی آفس سے تاریخی باب خیبر تک مارچ کیا ۔ شرکاء نے نہتے مظلوم کشمیریوں کے حق میں اور بھارتی جارحیت کے خلاف شدید نعرہ بازی کی۔ اس کے علاوہ اے سی لنڈی کوتل کی قیادت میں لنڈی کوتل بائی پاس سے حمزہ چوک تک مارچ کیا شرکاء نے قومی پرچم کے ساتھ ساتھ آزاد کشمیر کا پرچم بھی اٹھائے تھے۔ “مودی کا جو یار ہے غدار ہے غدارہے” کے نعرے بلند کئے۔

باڑہ بازار میں بھی تاجر یونین کی قیادت میں یکجہتی کشمیر ریلی نکالی گئی۔ شرکاء نے کشمیر کی آزادی تک جدوجہد جاری رہے گے کے نعرے لگائے۔ ریلیوں کے دوران شاہراہوں کو بند رکھا گیا۔

باجوڑ

ملک بھر کی طرح قبائلی ضلع باجوڑ میں بھی کشمیریوں کیساتھ اظہار یکجہتی کیلئے ریلیاں نکالی گئی۔ مرکزی ریلی خاربازار میں منعقد ہوئی جس کی قیادت ڈپٹی کمشنر باجوڑ عثمان محسود اور ڈی پی او پیر شہاب علی شاہ نے کی۔

ضلع باجوڑ کے مختلف بازاروں خاربازار ،عنایت کلی بازار ، پھاٹک بازار ، راغگان بازار اور دیگر بازاروں میں تاجر برادری ، سول سوسائٹی ، سکولوں کے طلباء ،کالجز کے طلباء، سیاسی جماعتوں نے ریلیاں نکالی۔

خار بازار میں منعقدہ ریلی سے ڈی سی باجوڑ عثمان محسود ، پی پی پی باجوڑ کے صدر اورنگزیب انقلابی ، پی ٹی آئی باجوڑ کے صدر ڈاکٹر خلیل الرحمن ، خار بازار تاجربرادری کے صدر حاجی خان بہادر ، لاہور خان ، جمعیت علمائے اسلام کے قاری محسن ، پرائیوٹ ایجوکیشن نیٹ ورک باجوڑ کے صدر نورحمان اور دیگر نے خطاب کیا۔

ریلیوں سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ کشمیر پاکستان کا شہ رگ ہے۔ بھارتی حکومت اور مودی کےخلاف بھی شدید نعرہ بازی کی۔ مقررین نے کہا کہ اقوام متحدہ اور عالمی انسانی حقوق کے ادارے بھارتی مظالم پر خاموش تماشائی بنے بیٹھے ہیں انہوں نے اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کے اداروں سے مطالبہ کیا کہ کشمیریوں پر بھارتی مظالم رکوائے۔

 شمالی وزیرستان

شمالی وزیرستان کے ھیڈکواٹر میرانشاہ میں بھی کشمریوں کے ساتھ یوم یکجہتی ریلی نکالی گئی۔

ریلی میں انڈیا کے خلاف نعرے بازی کی گئی۔ مظاہرین نے بینرز اٹھا رکھے تھے جس پر کشمیر جل رہا ہے کے نعرے درج تھے۔ ریلی میں ڈی پی او شفیع اللہ گنڈاپور،ڈی سی عبدالناصر صاحب، اے ڈی سی منظور آفریدی،ڈی ایس پی سید جلال کے علاوہ سیول سوسائٹی کے اراکین،  قبائلی عمائدین اور سکول کے طلبہ اور ڈسٹرکٹ پولیس نے بھر پور حصہ لیا۔

ریلی نے گورنر ماڈل سکول سے نکل کر وزیرستان کے مختلف علاقوں سے گزر کرعیدک گیٹ کے سامنے جلسے کی شکل اختیار کی۔ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ڈی پی او شفیع اللہ گنڈا پور نے کہا کہ پاکستانی عوام اور سرکاری ادارے متحد اور متفق ہیں ہر حالت میں کشمریوں کا ساتھ دیں گے۔

مردان

5 فروری یوم یکجہتی کشمیر کے موقع پر کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے ضلع انتظامیہ مردان کے زیر اہتمام محکمہ تعلیم کے تعاون سے پروقار تقریب کا انعقاد خیبر پختونخواہ ہاوس میں کیا گیا۔

تقریب میں ڈپٹی کمشنر کیپٹن(ر) عبدالرحمان، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر فنائنس اینڈ پلانگ سمیع الرحمان، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل انجینئر سید شاہ زیب، اسسٹنٹ کمشنر میڈم عائشہ طایر، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر ہیڈکوارٹر جنید خالد و خولہ حقدار، یوتھ افیسر عثمان خان سمیت محکمہ تعلیم،ڈبلیو ایس ایس سی ایم کے اہلکار، میڈیا نمائندوں اور گورنمنٹ و پرائیویٹ سکولوں کے اساتذہ کرام، طلباء کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

 

تقریب میں گورنمنٹ و پرائیویٹ سکولوں کے طلباء نے تلاوت قران پاک سے تقریب کا آغاز کرتے ہوئے قومی ترانہ، نعت، ملی نغمے ، ٹیبلوں اور کشمیروں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے انکے حق میں تقاریر پیش کی۔

ملک بھر کی طرح ضلع مردان میں تقریب کا مقصد کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کرنا، مقبوضہ وادی میں بھارتی فوج کے وحشیانہ مظالم، خواتین کی بے حرمتی، نوجوانوں کو لاپتہ کر کے مارے جانے جیسے افسوس ناک واقعات کو عالمی برادری کے سامنے اجاگر کرنا تھا۔

اس موقع پر ڈپٹی کمشنر نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا پاکستان کی عوام مشکل کی اس گھڑی میں کشمیری بھائیوں ، ماؤں ، بہنوں اور ان بچوں کے ساتھ ہے جنپر بھارت سرکار کی جانب سے ظلم ڈھائے جا رہے ہیں، انہوں نے سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ انشااللہ ایک دن ایسا آئیگا کہ اسلامی جمہوریہ پاکستان دنیا پر غالب آئیگا اور کشمیر اور پاکستان ایک ہوگا۔

اورکزئی

قبائلی ضلع اورکزئی میں یوم کشمیر منانے کے حوالے سے ایک پروقار تقریب قبائلی مشران اور طلباء و طالبات نے شرکت کیا.

تقریب میں طلباء و طالبات نے کشمیر کے حوالے سے تقاریر ملی نغمے اور خاکے پیش کئے.

یوم کشمیر کے حوالے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے قبائلی مشران کا کہنا تھا کہ کشمیریوں کے آزادی کے جدوجہد میں 95 ہزار کشمیری شہید 13 ہزار مسنگ پرسن ہوئے 21 ہزار زنانہ کے ساتھ زیادتی ہوئی 2 لاکھ گھر تباہ ہو گئے.

انہوں نے کہا ہے کشمیر پر انڈیا نے غیرقانونی قبضہ کیا ہوا ہے یو این کے قرارداد کے مطابق کشمیریوں کو حق خودارادیت کا حق نہیں دیا جاتا ہے.

انہوں نے کہا ہے کہ ہم کشمیری بھائیوں کے ساتھ ہیں انڈیا کے ظالم حکومت نے کشمیریوں سے ان کی زمین چھین لی اقوام عالم کشمیر کے مظالم پر خاموشی توڑ دیں

قبائلی مشران کا کہنا تھا کہ آزاد کشمیر کو ہمارے قبائل نے لشکر کرکے ازاد کیا تھا حکومت ہمیں اجازت دیں انشاءاللہ مقبوضہ کشمیر کو آزاد کریں گے

باجوڑ

ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر خطیر احمد کی ہدایات پر اور ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر محمد سعد خان کی زیر نگرانی میں صوبے بھر کی طرح ریسکیو 1122 باجوڑکی جانب سے بھی 5 فروری یوم یکجہتی کشمیر کے دن کو شایان شان طریقے سے منایا گیا۔۔

ضلع بھر کے طرح ریسکیو 1122 باجوڑ کی طرف سے بھی کشمیر کے حق میں ریلی نکالی گٸی اور کشمیر بھاٸیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلے ریلی میں ریسکیو افسران اور اہلکاروں نے کثیر تعد ادا میں شرکت کی۔

بعد ازاں ڈسٹرکٹ ایمرجنسی افیسر محمد سعد خان کے ہدایت پر ریسکیو افسران نے ضلعی انتظامیہ کے زیر اہتمام سول کالونی ریلی میں بھی شرکت کی.

ریلی کے شرکإ پولیس اور ریسکیو اہلکاروں نے انڈیا کے کشمیر پر غاصبانہ قبضے اور ظلم وبربریت کے خلاف کشمریوں کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا کہ ہم کشمریوں کے ساتھ کھڑے ہیں ار کھڑے رہیں گے.

انہوں نے کہا ہے کہ ریلی شرکإ نے ہاتھوں میں پاکستان اور کشمیر کے فلیکس اٹھا رکھے تھے اور کشمیر بنے کا پاکستان کے نعرے لگاۓ۔