وزیراعظم شہباز شریف نے نیوکلیئر پاور پلانٹ کے منصوبے K3 کا افتتاح کر دیا

وزیراعظم شہباز شریف نے ایٹمی بجلی گھر کے منصوبے کے تھری کا افتتاح کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف نے ایک روزہ دورے پر کراچی پہنچ کر نیوکلیئر پاور پلانٹ کے تھری کی افتتاحی تقریب میں شرکت کی۔

اس موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان 27 ارب ڈالر کا ایندھن درآمد کر رہا ہے، ایندھن کی درآمد میں اربوں ڈالر کی بچت سے پاکستان آگے بڑھ سکتا ہے، ملک کو سستے ایندھن کی ضرورت ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ شمسی توانائی بجلی کی ضرورت پوری کرنے میں بہت مددگار ہو سکتی ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ نواز شریف کے دورِ حکومت میں اس منصوبے کو حتمی شکل دی گئی تھی، اس منصوبے سے 1100 میگاواٹ ایٹمی بجلی حاصل ہو سکے گی۔ وزیراعظم نے کہا کہ امید ہے دوست ملک چین فی میگاواٹ کی قیمت کم کرے گا، چین اور پاکستان بہترین دوست ہیں اور یہ دوستی 75 سال میں مضبوط ہوتی گئی ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ سی پیک منصوبے پر نواز شریف کے دور میں دستخط ہوئے، سی پیک منصوبے سے پاکستان میں ہزاروں میگاواٹ بجلی بن رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ماضی میں کچھ مشکلات سے سی پیک میں تاخیر ہوئی، پوری امید ہے پاک چین تعلقات سے سی پیک منصوبے آگے بڑھیں گے۔ اپنی تقریر میں وزیراعظم نے کہا کہ تھر کا کوئلہ سینکڑوں برس پاکستان کی ترقی میں کردار ادا کر سکتا ہے، کوئلے سے توانائی حاصل کرکے اربوں ڈالر کی بچت کی جا سکتی ہے۔