ضلع خیبر میں 130 مریض جبکہ پاکستان ایڈز کے حوالے سے دنیا میں دوسرے نمبر پر

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

ایڈز ایک قابل علاج مرض ہے ضلع خیبر میں 130 افراد جس میں مبتلا بتائے جاتے ہیں جبکہ پاکستان ایڈز سے متاثرہ افراد کے حوالے سے دنیا میں دوسرے نمبر پر ہے۔

اس حوالے سے جمرود تحصیل جرگہ حال میں ایڈز آگاہی پروگرام منعقد ہوا جس میں مہمان خصوصی ڈپٹی کمشنر محمود اسلم وزیر کے علاوہ ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر شفیق، ایڈز پروگرام منیجر ڈاکٹر دورخانے، اسسٹنٹ کمشنر جمرود اکبر افتخار اور علاقائی مشران و طلبہ نے بھی شرکت کی۔

اس موقع پر ڈاکٹر درخانے کا کہنا تھا کہ گھبراہٹ اور شرمندگی کے باعث علاج نا ہونے سے مرض مزید پھیلتا جا رہا ہے اگرچہ ایڈز ایک قابل علاج مرض ہے اور کسی بھی ہسپتال میں مفت ٹیسٹ و علاج کی سہولت موجود ہوتی ہے۔

انھوں نے کہا کہ پورے قبائلی اضلاع میں ایڈز کے 738 مریض رجسٹرڈ ہیں جن کا علاج جاری ہے، بہت جلد ضلع خیبر میں ایڈز ٹیسٹ کیمپ شروع کئے جائیں گے۔

ڈاکٹر درخانے کے مطابق جنسی تعلقات سے پرہیز، دانتوں کے علاج میں استعمال شدہ آلات، سرنج کے دوبارہ استعمال سمیت بلیڈکے بار بار استعمال کی روک تھام سے ایڈز پر قابو پایا جا سکتا ہے۔