فرانس پاکستان کو 12 کروڑ یورو قرضہ دے گا

یورپی ملک فرانس خیال خوڑ  ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے لیے ساڑھے 28 ارب روپے (120 ملین یورو) کا قرضہ فراہم  کرے گا، یہ 128 میگاواٹ کی سہولت ہے، جو خیبر پختونخوا میں پتن شہر کے قریب واقع ہے۔

فرانسیسی سفارت خانے کی طرف سے جاری کردہ ایک پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ اسلام آباد میں دونوں حکومتوں کے درمیان مالیاتی معاہدے پر دستخط کیے گئے۔ اس معاہدے پر سیکریٹری اقتصادی امور ڈویژن ڈاکٹر کاظم نائز، پاکستان میں فرانس کے سفیر نکولس گیلی اور فرانسیسی ترقیاتی ادارے کے کنٹری ڈائریکٹر فلپ سٹین میٹز نے دستخط کیے۔

فرانس کی طرف سے نرم شرائط پر دیا جانے والا یہ قرضہ واٹر اینڈ پاور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کو پاکستان میں پن بجلی کے شعبے کی ترقی کے مینڈیٹ میں مدد فراہم کرے گا۔ فنڈنگ ​​سے قابل تجدید بجلی کی پیداوار کی مسابقت کو بڑھانے میں بھی مدد ملے گی۔ یہ سستی بجلی  اور توانائی کی فراہمی کو بڑھانے میں معاون ثابت ہوگی۔

خیال خوڑ ہائیڈرو پاور پراجیکٹ دریائے سندھ کی معاون ندی کی توانائی کی صلاحیت کو بروئے کار لاتا ہے۔ 128 میگاواٹ ہائیڈرو الیکٹرک پلانٹ 420 گیگا واٹ فی سال پیدا کرے گا، جس میں سے 25 فیصد زیادہ لوڈ ہوگا۔

یہ منصوبہ جنیوا میں حال ہی میں کلائمٹ ریزیلئینٹ پاکستان کانفرنس میں ملک میں صاف اور ماحول دوست توانائی کی فراہمی اور ماحول کو نقصان پہنچانے والی گیسوں کے اخراج میں کمی کے عزم کی عکاسی کر رہا ہے۔

فرانسیسی ترقیاتی ادارہ ملک میں توانائی اور شہری ترقی کے شعبہ جات میں گرین انویسٹمنٹ کے ذریعہ پاکستان کو مالی اور تکنیکی معاونت فراہم کر رہا ہے۔ سیکرٹری اقتصادی امور ڈویژن نے پاکستان کو مالی معاونت فراہم کرنے پر فرانس کی حکومت اور فرانسیسی ترقیاتی ادارہ کا شکریہ ادا کیا۔