صدر اور وزیراعظم کی لکی مروت دہشت گردی کی مذمت

صدر عارف علوی اور وزیراعظم شہباز شریف نے لکی مروت میں پولیس اسٹیشن پر ہونے والے حملے کی شدید الفاظ میں مذاکت کرتے ہوئے شہدا کے لواحقین سے ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔

صدر عارف علوی نے اپنے بیان میں شہید پولیس اہلکاروں کے درجات کی بلندی اور زخمیوں کی صحتیابی کے لیے دعا کرتے ہوئے شہید ہونے والے اہلکاروں کے اہلخانہ سے اظہار تعزیت کیا اور کہا کہ دہشتگردی کی باقیات کے مکمل خاتمے تک ہماری کوششیں جاری رہیں گی۔

وزیراعظم شہباز شریف کا کہنا تھا شہید پولیس اہلکاروں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں، پولیس کے افسران اور جوانوں نے دہشتگردی کے خلاف عظیم قربانیاں دی ہیں۔

ان کا کہنا تھا دہشتگردوں، ان کے معاونین اور سہولت کاروں کا خاتمہ حکومت کی اولین ترجیح ہے، خیبرپختونخوا حکومت شہید پولیس اہلکاروں کے اہلخانہ کو شہدا پیکج دے۔

وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے بھی لکی مروت میں تھانے پر دہشتگرد حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے متعلقہ حکام سے رپورٹ طلب کر لی۔

وزیراعلیٰ محمود خان نے حملے کو انتہائی افسوسناک واقعہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ شہداء کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی، حملے میں زخمی پولیس اہلکاروں کو بہترین طبی امداد فراہم کی جائیں۔

یاد رہے کہ لکی مروت میں پولیس اسٹیشن پر ہونے والے حملے میں 4 اہلکار شہید اور 4 زخمی ہوئے تھے۔

پولیس اہلکاروں کی شہادت پر وزیراعلیٰ نے آئی جی سے رپورٹ طلب کرلی

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے لکی مروت میں دہشتگرد حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے آئی جی پولیس سے رپورٹ طلب کرلی۔

وزیراعلیٰ کے پی نے زخمی پولیس اہلکاروں کو بہترین طبی امداد فراہم کرنے کی ہدایت کر دی۔ محمود خان نے شہید ہونے والے اہلکاروں کی درجات بلندی اور لواحقین کے لیے صبر و تحمل کی دعا کی۔ انکا کہنا تھا کہ واقعہ انتہائی افسوس ناک ہے، شہداء کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائے گی۔

واضح رہے کہ گزشتہ شب لکی مروت میں تھانہ برگی میں دہشت گردوں کے حملے میں 4 پولیس اہلکار شہید اور 4 زخمی ہوگئے۔ دہشت گردوں نے ہینڈ گرینڈ اور راکٹ سے تھانے پر حملہ کیا۔