خیبر : ڈسٹرکٹ خیبر کے اے ڈی آر کمیٹی ممبران کے لیے تربیتی ورکشاپ کا انعقاد

خیبر۔ سی آر اے نارتھ کے زیر اہتمام ڈسٹرکٹ خیبر کے اے ڈی آر کمیٹی ممبران کے لیے پشاور میں پانچ روزہ تربیتی ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا جس میں پورے ضلع خیبر سے قبائلی مشران اور بلخصوص خواتین کو مدعو کیا گیا تھا،

میڈیا رپورٹس کے مطابقورکشاپ دو گروپوں میں تقسیم کیا گیا تھا، تاہم باڑہ سب ڈویژن کے گروپ میں باڑہ کے مختلف قبیلوں، قمبر خیل، ملک دین خیل، شلوبر، سپاہ، کمرخیل اور اکاخیل کے مشران سمیت خواتین بھی موجود تھیں۔

اس موقع پر چیئر پرسن و ممبر تحصیل کونسل باڑہ سب ڈویژن بی بی نگینہ آفریدی نے بھی خصوصی طور پر شرکت کی۔

کمیونٹی ریزلیئنس ایکٹیویٹی (نارتھ) کی تعاون سے ضلع خیبر کے اے ڈی آر (کمیٹی ممبران) آلٹرنیٹیو ڈسپیوٹ ریزلوشن یعنی متبادل ذرائع سے مسائل کے حل کے لیے بنائی جانے والی کمیٹی ممبران، مختلف تنازعات کے حل سمیت کئی اہم امور زیر بحث لائے گئے.

میڈیا رپورٹس کے مطابق تمام ملکان و مشران سمیت خواتین شرکاء نے بھی کھل کر اپنے رائے کا اظہار کیا جبکہ ورکشاپ میں ضلعی انتظامیہ خیبر اور سی آر اے نارتھ کے آفشل بھی موجود تھے۔

پانچ روزہ تربیتی ورکشاپ کے موقع پر بی بی نگینہ آفریدی نے بھی ہر ایکٹیویٹی میں بھرپور حصہ لیا اور کہا کہ اے ڈی آر کمیٹی میں خواتین کو شامل کرنا صوبائی حکومت اور ضلعی انتظامیہ کا نہایت احسن اقدام ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس اقدام کی وجہ سے مقامی خواتین کی مسائل آسانی کے ساتھ اور بروقت حل کی طرف جائیں گے۔

بی بی نگینہ آفریدی نے قبائلی ملکان و مشران کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا کہ ان مشران کی کوششوں کی وجہ سے قبائلی علاقوں میں بڑے بڑے تنازعات جرگہ کے ذریعے حل ہوئے ہیں.

انہوں نے کہا کہ اب چونکہ جرگہ کو اے ڈی آر کا نام دینے کے ساتھ ساتھ قانونی اختیار بھی دے دیا گیا تو اس سے مقامی سطح پر تنازعات کے حل میں آسانیاں پیدا ہوگی۔

اے ڈی آر کمیٹی میں ضلع خیبر کے نامور مشران اور خواتین بھی شامل کیئے جائیں گے جس کو باقاعدہ آئینی اختیار حاصل ہوگا جبکہ اے ڈی آر کے ذریعے ہر مسئلے کا حل جلد ہی تلاش کیا جائے گا چاہے عدالتی کارروائی کیوں نہ ہو۔