لکی مروت: شرپسندوں کے حملے میں شہید ہونے والے چھ پولیس اہلکاروں کی نماز جنازہ ادا

لکی مروت میں شرپسندوں کے حملے میں شہید ہونے والے چھ پولیس اہلکاروں کی نماز جنازہ آج پولیس لائن لکی مروت میں ادا کردی گئی ۔اس موقع پر پولیس کے چاق وچوبند دستے نے شہداءکو سلامی پیش کی ۔

آئی جی پی خیبرپختونخوا معظم جاہ انصاری ،ریجنل پولیس آفیسر بنوں ،ڈی سی بنوں ،اعلیٰ فوجی وسول حکام اور مقامی افراد نے کثیر تعداد میں جنازے میں شرکت کی ۔

آئی جی پی اوردیگر شرکاءنے قومی پرچم میں لپٹے شہداءکے تابوتوں پر پھول چڑھائے۔اس موقع پر آئی جی پی نے شہداءکے ورثاءسے فاتحہ خوانی کی۔

آئی جی پی معظم جاہ انصاری نے محکمہ پولیس کے لیے پولیس شہداءکی خدمات کو خراج عقیدت پیش کیا اور کہا کہ پولیس شہداءکا خون رائیگاں نہیں جائیگا۔

آئی جی پی نے شہداءکے ورثاءکو یقین دلایا کہ اس افسوسناک واقعے میں ملوث شرپسندوں کو جلد از جلد بے نقاب کرکے قانون کے کٹہرے میں لایا جائیگا۔

آئی جی پی نے اس موقع پر موجود اعلیٰ پولیس حکام کو ہدایت کی کہ وہ اس بزدلانہ حملے میں ملوث عناصر کے خلاف گھیرا تنگ کرکے اُن کی فوری گرفتاری عمل میں لائیں۔

دریں اثناءمیڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے آئی جی پی معظم جاہ انصاری نے کہا کہ پچھلے ڈیڑھ دو مہینوں سے لکی مروت میں پولیس نے شرپسندوں کے خلاف کامیاب آپریشنز کئے۔ بہت سے دہشت گرد مارے گئے یہ ان کاروائیوں کا ردعمل ہے۔

آئی جی پی نے کہا کہ پولیس کی جان پر کھیل کر کاروائیوں سے دہشت گردی آخری سانس لے رہی ہے۔ اور اس عزم کا اعادہ کیا کہ آخری دہشت گرد کے خاتمے تک یہ جنگ ہر قیمت پر جاری رہے گی۔

آئی جی پی نے کہا کہ دہشت گردوں کے خلاف عوام اور پولیس ایک پیج پر ہیں۔ پولیس عوام کے ساتھ ملکر امن و امان کے قیام کے لیے اقدامات اُٹھارہی ہے۔

عوام کو چاہیے کہ وہ دہشت گردوں کو پناہ دینے سے گریز کریں اور دہشت گردوں کی موجودگی کی صورت میں پولیس کو بروقت اطلاعات پہنچائیں۔

آئی جی پی نے کہا کہ لکی مروت میں تمام پولیس عملہ مقامی ہے جو اپنی مٹی کے دفاع اور حفاظت پر مرمٹنے کے لئے تیار ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں آئی جی پی کا کہنا تھا کہ پولیس اس شہر ،صوبے اور ملک کی حفاظت کے لئے کھڑی ہے اور یہ پولیس کی فرض شناسی کی اعلیٰ ترین مثال ہے اور آئندہ بھی اپنے پیشہ ورانہ فرائض وابستہ عوامی توقعات کے مطابق ادا کرتے رہیں گے ۔

ایک اور سوال کے جواب میں آئی جی پی نے کہا کہ پولیس مخصوص یونیفارم اور ڈیوٹی کی نوعیت کے باعث آسان ٹارگٹ بنے ہوئے ہیں۔ اور کہا کہ پولیس کے بازو پر لگا بیج وطن اور پولیس کی شناخت ہے اور اس سبز ہلالی پرچم کو اونچا رکھنے کے لیے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کیا جائیگا۔

ایک اور سوال کے جواب میں آئی جی پی نے کہا کہ صوبائی حکومت پولیس فورس کی تمام ضروریات پورا کرنے کے لیے ہر ممکن بھر پور تعا ون کررہی ہے۔

بعد ازاں آئی جی پی پولیس نے لائن لکی مروت میں قائم کمانڈ اینڈ کنٹرول سنٹر کا دورہ کیا۔ جہاں آئی جی پی نے سی سی ٹی وی کیمروں کا معائنہ کیا اور کیمروں کی مانیٹرنگ نظام کا جائز لیا۔