گلگت بلتستان : شرپسندوں کے ہاتھوں تباہ ہونے والے سکول کی بحالی کی کوششیں تیز

گلگت بلتستان کے ضلع دیامر کی تحصیل داریل میں شرپسندوں کی جانب سے جلائے گئے سکول کی عمارت کو بحال کرنے کی کوششیں تیز ہو گئیں۔

صوبائی حکومت متاثرہ سکول کو ایک ہفتے کے اندر اندر بحال کرکے درس و تدریس کا سلسلہ پھر سے شروع کرنے کیلئے کوشاں ہے۔

وزیر اعلیٰ خالد خورشید کی خصوصی ہدایت پر انتظامیہ کی ٹیم موقع پر موجود ہے اور بحالی کی سرگرمیوں میں مصروف ہے۔

یاد رہے کہ متاثرہ سکول میں دو ماہ قبل ہی درس و تدریس کا سلسلہ شروع ہوا تھا۔ 2018 میں دہشتگردوں نے دیامر کے مختلف علاقوں میں 13 سکولوں کو جلایا تھا جن میں سے سات سکول داریل میں جلائے گئے تھے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق 2011 میں بھی سکولوں پر حملے ہوئے تھے۔ متاثرہ سکولوں میں اکثر لڑکیوں کے سکولز تھے جنہیں جلائے گئے۔ سکولوں کو جلانے والے شرپسندوں کو ابھی تک قانون کی گرفت میں نہیں لایا گیا۔