سی ٹی ڈی کی کارروائی، کالعدم تنظیم جماعت الاحرار کے دہشتگرد ہلاک

کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ بلوچستان کی جانب سے ایک کارروائی میں منشیات کی اسمگلنگ کرنے والے 4 افراد کو ہلاک کر دیا گیا ہے۔ جن کا تعلق کالعدم دہشتگرد تنظیم جماعت الاحرار سے بتایا جا رہا ہے۔

ترجمان کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ کے مطابق سی ٹی ڈی بلوچستان کو خفیہ اطلاع ملی کہ کالعدم جماعت الاحرار سے تعلق رکھنے والے دہشتگرد قلعہ عبداللہ کے ڈسٹرک گلستان سے کراچی تک بین الصوبائی سطح پر منشیات کی اسمگلنگ کرنے والے ہیں۔

ترجمان کے مطابق اسمگلنگ کا مقصد پیسے حاصل کرکے پاکستان میں دہشتگردی کو فروغ دینا اور کالعدم تنظیم کے دہشتگردی کے اخراجات کو پورا کرنا تھا۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ اس اطلاع پر کوئٹہ کے شالکوٹ پولیس اسٹیشن کے احاطے میں سی ٹی ڈی نے ناکہ بندی کی اور مبینہ افراد کی تلاش شروع کر دی گئی۔ چیکنگ کے دوران مبینہ افراد کی گاڑی پہنچی۔ جب انہیں روکنے کیلئے اشارہ کیا گیا، تو ملزمان نے سی ٹی ڈی کے اہلکاروں پر فائرنگ کی۔

سی ٹی ڈی کی جانب سے جوابی فائرنگ ہوئی اور کچھ دیر فائرنگ کا سلسلہ جاری رہا۔ ترجمان سی ٹی ڈی کا کہنا ہے کہ مبینہ دہشتگردوں نے شمالی پہاڑی کی طرف فرار ہونے کی کوشش کی۔ تاہم ڈیڑھ گھنٹہ جاری رہنے والے فائرنگ کے بعد 4 دہشتگردوں کی لاشیں ملیں۔

سی ٹی ڈی ترجمان کے مطابق مبینہ افراد کی حراست سے 27 کلو ہیروئین اور اسلحہ برآمد ہوئے۔ مبینہ افراد کے خلاف سی ٹی ڈی پولیس اسٹیشن کوئٹہ میں ایف آئی آر درج کر لیا گیا ہے۔