33ویں نیشنل گیمز، پاک آرمی کی خواتین کھلاڑیوں کا اعزاز

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

3ویں نیشنل گیمز کے خواتین اتھلیٹکس مقابلوں میں پول والٹ کے ایونٹ میں پاکستان آرمی کی سدرہ بشیرا ور ٹرپل جمپ ایونٹ میں پاکستان آرمی ہی کی ماریہ مراتب نے اپنے سابقہ ریکارڈ کو بہتر بناتے ہوئے اپنے اپنے ایونٹ میں نیا قومی ریکارڈ بنا کر گولڈ میڈلز جیتنے کا اعزاز حاصل کرلیا۔

پشاور کے قیوم سپورٹس کمپلیکس میں پیر کے روز پول والٹ کے مقابلوں کے فائنل میں پاکستان آرمی کی سدرہ بشیر نے اسلام آبادمیں منعقدہ قومی اتھلیٹکس چمپئن شپ میں بنائے گئے اپنے ریکارڈ کو توڑ کر اس کٹیگری میں 3.15 میٹرز کیساتھ گولڈ میڈل جیت لیا جبکہ اسی مقابلے میں پاکستان واپڈا کی خاتون کھلاڑی نسیم اختر نے 2.50 میٹر کیساتھ چاندی اور پاکستان آرمی کی مہناز بی بی نے 2.50 میٹر کیساتھ تیسری پوزیشن حاصل کرلی۔

اسی طرح ٹرپل جمپ کے مقابلوں میں پاکستان آرمی کی ماریہ مراتب نیا قومی ریکارڈ بنانے میں کامیاب رہیں، انہوں نے 12.25میڑز چھلانگ لگا کر سونے، پاکستان واپڈا کی آمنہ سراج نے 10.46میٹرز کیساتھ چاندی جبکہ پنجاب کی امت الرحمن نے10.13میٹر کیساتھ کانسی کا تمغہ جیتا۔

دوسری جانب 33 ویں نیشنل گیمز میں کے سلسلے میں منعقدہ نمائشی تھرو بال میچ میں سندھ نے مضبوط واپڈا کی ٹیم کو دو صفر سے شکست دے کر اپ سیٹ کر دیا۔ سندھ نے 25، 21اور 25، 22 سے کامیابی حاصل کی جبکہ باسکٹ بال ایونٹ میں آرمی نے بلوچستان کو تین پوائنٹس کے مقابلے میں 92 اور واپڈا نے خیبر پختونخوا کو 14 کے مقابلے میں 108 پوائنٹس سے ہرایا۔

اسی طرح والی بال کے مقابلوں میں ہائیر ایجوکیشن نے سند ھ کو 25-15,25-11,25-15 کے سکور سے شکست دی جبکہ پاکستان آرمی کی ٹیم کو پولیس کیخلاف واک اوور ملا۔

اسی طرح قومی کھیلوں کے شوٹنگ مقابلوں کے 14 ایونٹس کا فیصلہ ہو گیا۔ پاکستان آرمی نے سونے کے 12 تمغے جیت لئے ہیں، پاکستان نیوی نے سونے کے سات تمغوں کے ساتھ دوسری پوزیشن حاصل کر لی ہے جبکہ پاکستان ائیر فورس کے نشانہ بازوں نے سونے کے دو تمغے جیت لئے ہیں۔

پاکستان واپڈا اور سندھ نے بھی ایک ایک سونے کا تمغہ جیتا، سکیٹ، ٹریپ، ڈبل ٹریپ، ائیر رائفل اور ائیر پسٹل مقابلوں میں پاکستان آرمی کے کھلاڑیوں نے انفرادی میڈل حاصل کئے جبکہ پاکستان نیوی کی جانب سے چھ انفرادی اور ایک ٹیم ایونٹ میں سونے کے تمغے جیتے گئے۔

قومی کھیلوں کے باضابطہ افتتاح سے قبل شوٹنگ مقابلے جہلم میں شروع ہو گئے تھے تاہم ابھی دو ایونٹس باقی ہیں۔اگرچہ پاکستان واپڈا اور صوبہ سندھ کے نشانہ باز بھی میڈل حاصل کرنے میں کامیاب رہے تاہم خیبر پختون خوا کے نشانہ باز ایک پوائنٹ بھی حاصل نہیں کر سکے اور ان کی کارکردگی انتہائی مایوس کن رہی۔

علاوہ ازیں 33ویں نیشنل گیمزکے سلسلے میں خواتین کے ہاکی مقابلے سیمی فائنل مراحل میں داخل ہوگئے ہیں جہاں پاکستان آرمی، پاکستان ریلوے، پنجاب اور پاکستان واپڈ کی ٹیمیں سیمی فائنل تک رسائی میں کامیاب ہوگئی ہیں۔

پشاور کے لالہ ایوب ہاکی سٹیڈیم میں منعقدہ پہلے کوارٹر فائنل میں پاکستان آرمی کی ٹیم نے میزبان ٹیم خیبر پختونخوا کو عبرتناک شکست دیکر صفر کے مقابلے میں چار گول سے ہراتے ہوئے ایونٹ سے باہر کردیا جبکہ دوسرے کوارٹر فائنل میں پاکستان ریلوے کی ٹیم نے سندھ پر گولوں کی بوچھاڑ کردی اور یکطرفہ مقابلے کے بعد صفر کے مقابلے میں 13 گول سے کامیابی سمیٹی، ریلوے کی جانب سے تہمینہ نے چار، آرزو نے تین، سحرش اور شارقہ نے دو دو جبکہ مہوش اور زارا نے ایک ایک گول سکور کیا۔

اسی طرح پنجاب نے ہائیر ایجوکیشن کمیشن کی ٹیم کو ایک دلچسپ مقابلے کے بعد صفر کے مقابلے میں دو گول سے ہرایا، پنجاب کی جانب سے اریبہ سرور اور صدف نے پیلنٹی کارنر کے ذریعے گول سکول کرکے اپنی ٹیم کی کامیابی میں اہم کردار ادا کیا۔

واپڈا کی ٹیم کو بلوچستان کیخلاف واک آوور کی بنیاد پر سیمی فائنل تک رسائی حاصل ہوئی ہے۔