خیبر پختونخوا : کسٹم چیک پوسٹ اور پی ٹی آئی رہنماء شہریار آفریدی کے گھر پر حملہ

خیبر پختونخوا کے علاقے لکی مروت میں نامعلوم مسلح افراد نے کسٹم چیک پوسٹ پر حملہ کردیا۔

پولیس ذرائع کے مطابق نامعلوم افراد نے کسٹم اہلکار کو سرکاری نوکری چھوڑنے کی وارننگ دی جبکہ کسٹم اہلکار کو دو مزدوروں سمیت اغواء کرلیا تھا تاہم بعدازاں دونوں مزدوروں اور اہلکار کو رہا کردیا۔

پولیس نے واقعے کی تحقیقات شروع کردی ہیں جبکہ حملہ آور مسلح افراد کی شناخت کے لیے چھاپے مارے جارہے ہیں۔

دسرے جانب پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنماء اور سابق وفاقی وزیر شہریار خان آفریدی کے کوہاٹ میں واقع آبائی گھر پر دستی بم حملہ ہوا ہے۔ پولیس کے مطابق واقعے کی سی سی ٹی وی ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہےکہ دستی بم گیٹ کے باہر پھٹا۔

پولیس کا کہنا ہےکہ دستی بم حملے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا، واقعے کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

پی ٹی آئی رہنماء سینیٹر اعجاز چوہدری نے ایک ٹوئٹ میں کہا ہے کہ سابق وفاقی وزیر اور تحریک انصاف کے مرکزی رہنماء شہریار آفریدی کے گھر میں کریکر بم سے حملہ ہوا ہے، اللہ کریم ان کی حفاظت فرمائے اور پاکستان کے دُشمنوں کو نیست و نابود فرمائے۔