ڈیرہ اسماعیل خان : جیل میں قیدیوں کو خواندہ بنانے کیلئے لٹریسی سنٹر کا قیام

انسپکٹر جنرل جیل خانہ جات خیبر پختونخوا کی ہدایات پر ڈسٹرکٹ سنٹرل جیل ڈیرہ اسماعیل خان میں قومی کمیشن برائے انسانی ترقی (این سی ایچ ڈی) کے تعاون سے قیدیوں کو خواندہ بنانے کیلئے”لٹریسی سنٹر” کا قیام عمل میں لایا گیا ہے۔

اس حوالے سے مہمان خصوصی سپرنٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ سنٹرل جیل ڈیرہ سمیع اللہ خان نے ایک سادہ اور پروقار تقریب میں فیتہ کاٹ کر ”لٹریسی سنٹر” کا افتتاح کردیا۔

اس موقع پر این سی ایچ ڈی کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر/فوکل پرسن عمر ثقاف خٹک بھی موجود تھے۔

تقریب میں جیل کے قیدی بھی موجود تھے، تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سپرنٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ سنٹرل جیل ڈیرہ سمیع اللہ خان نے کہا کہ علم کا حاصل کرنا ہم سب پر فرض ہے.

انہوں نے کہا کہ قیدیوں کو معاشرے کا کار آمد شہری بنانے کیلئے علم کے زیور سے آراستہ کرینگے، لٹریسی سنٹر کے قیام سے جیل کے قیدیوں کیلئے علم کا حصول آسان ہوگیا ہے، اس اہم فریضہ کی انجام دہی کیلئے جیل انتظامیہ این سی ایچ ڈی سے بھرپور تعاون کرے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ آئی جی جیل خانہ جات سعادت حسن کی ہدایات پر صوبے بھر اور بالخصوص ڈیرہ اسماعیل خان میں علم کے حصول کیلئے یہ پراجیکٹ شروع کیا گیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ نفرت جرم سے ہونی چاہئے، ہماری کوشش ہوگی کہ جیل کے قیدی اس پراجیکٹ سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھائیں۔

این سی ایچ ڈی کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر/فوکل پرسن عمر ثقاف خٹک نے کہا کہ ڈسٹرکٹ سنٹرل جیل ڈیرہ اسماعیل خان میں 5 ماہ کی مدت کیلئے یہ منصوبہ شروع کیا گیا ہے جس میں جیل کے قیدیوں کو ریاضی کی ایک اور اردو کی تین کتب پڑھائی جائیں گی، آخر میں کامیاب امیدواروں کو سرٹیفکیٹ بھی تقسیم کئے جائیں گے۔

اس پراجیکٹ کے تحت جیل کے 18 سال سے 45 سال تک کی عمر کے قیدی استفادہ حاصل کرسکیں گے تاکہ وہ جیل سے رہائی کے بعد معاشرے کے مفید شہری ثابت ہوسکیں۔