امریکا کی پاکستان کو F16 کا مرمتی سامان فروخت کرنے کی منظوری

پاکستان کو ایف 16 طیاروں کی مرمت کے لیے امریکی سامان کی فروخت کی منظوری مل گئی۔

پینٹاگون کے مطابق امریکی محکمہ خارجہ نے پاکستان کے لیے ایف 16 کے مرمتی سامان کی مد میں 45 کروڑ ڈالرز کے معاہدے کی منظوری دے دی۔

پینٹاگون نے بتایا ہے کہ سامان کا مرکزی ٹھیکہ ایئرو اسپیس کمپنی لاک ہیڈ مارٹن کارپوریشن کو دیا جائے گا۔

اس حوالے سے امریکی ڈیفنس سکیورٹی کو آپریشن ایجنسی (ڈی ایس سی اے) نے جاری کیے گئے اعلامیے میں کہا ہے کہ ڈیفنس سکیورٹی کو آپریشن ایجنسی نے مطلوبہ سرٹیفیکیشن فراہم کر دی۔

ڈی ایس سی اے کے اعلامیے کے مطابق حکومتِ پاکستان نے امریکا سے ایف 16 طیاروں کی دیکھ بھال اور معاونت برقرار رکھنے کی درخواست کی تھی۔

ڈیفنس سکیورٹی کو آپریشن ایجنسی کے اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ کانگریس کو اس ممکنہ فروخت کے بارے میں آگاہ کر دیا گیا ہے۔

ڈی ایس سی اے کے اعلامیے میں انجینئرنگ، تیکنیکی اور لاجسٹیکل سروسز کی فہرست شامل ہے۔ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ ممکنہ فروخت میں طیارے میں کسی نئی صلاحیت اور اسلحے کا اضافہ شامل نہیں۔

اعلامیے کے مطابق یہ فروخت امریکی خارجہ پالیسی اور قومی سلامتی کے اہداف کے حصول میں بھی مدد دے گی۔ اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ یہ ممکنہ فروخت پاکستان کے ایف 16 کے فضائی بیڑے کی دیکھ بھال جاری رکھنے میں مدد کرے گی۔

اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ اس فروخت سے پاکستان کو دہشت گردی کے خلاف آپریشنز میں فضا سے زمین پر مار کرنے کی صلاحیت کو برقرار رکھنے میں معاونت ملے گی۔

اعلامیے میں مزید کہا گیا ہے کہ پاکستان کو ان سروسز اور آلات کو اپنی افواج میں شامل کرنے میں کوئی مشکل نہیں آئے گی۔

امریکی ڈیفنس سکیورٹی کو آپریشن ایجنسی (ڈی ایس سی اے) کے اعلامیے میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ممکنہ فروخت سے خطے میں بنیادی عسکری توازن میں بھی کوئی تبدیلی نہیں آئے گی۔