سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی : پاک بھارت افواج کی ارنیہ سیکٹر میں بلااشتعال فائرنگ

قریب ڈیڑھ سال بعد جموں میں بین الاقوامی سرحد پر سیز فائر معاہدی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پاک بھارت افواج نے ایک دوسرے پر بلا اشتعال فائرنگ کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستانی رینجرس نے منگل کی صبح جنگ بندی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے جموں و کشمیر میں بین الاقوامی سرحد پر بلااشتعال فائرنگ میں بارڈر سیکورٹی فورس (بی ایس ایف) کو نشانہ بنایا۔

انہوں نے کہا کہ بی ایس ایف نے جموں ضلع کے ارنیا سیکٹر میں فائرنگ کا مناسب جواب دیا۔ بی ایس ایف کے ڈپٹی انسپکٹر جنرل ایس پی ایس سندھو نے کہا کہ آج صبح چوکس بی ایس ایف جموں کے دستوں نے بی ایس ایف کی گشتی پارٹی پر پاکستان رینجرز کی بلا اشتعال فائرنگ کا مناسب جواب دیا۔

بی ایس ایف جموں کے تعلقات عامہ کے افسر نے یہ بھی کہا کہ بھارتی طرف سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا اور نہ ہی کوئی زخمی ہوا۔

یاد رہے کہ بھارت اور پاکستان نے فروری 2020 میں جموں و کشمیر میں سرحدوں پر سیز فائر پر اتفاق کیا تھا۔

چند خلاف ورزیوں کو چھوڑ کر یہ معاہدہ سرحدی باشندوں اور کسانوں کو ریلیف فراہم کر رہا ہے جنہوں نے لائن آف کنٹرول اور بین الاقوامی سرحد پر کاشتکاری کی سرگرمیاں دوبارہ شروع کر دی ہیں۔