یومِ دفاع آج بھرپور جوش و جذبے سے منایا جا رہا ہے

ملک بھر میں یومِ دفاع آج بھرپور جوش و جذبے کے ساتھ منایا جارہا ہے۔ مسلح افواج کے غازیوں اور شہدا کو سلام اور خراجِ عقیدت پیش کیا جائے گا۔ کراچی میں مزار قائد پر گارڈز کی تبدیلی کی تقریب ہو گی، اس کے علاوہ دیگر شہروں میں بھی تقریبات منعقد ہوں گی۔

جنگ ستمبر کے غازیوں اور شہیدوں نے جرأت و بہادری کی وہ لازوال داستانیں رقم کیں جو رہتی دنیا تک یاد رہیں گی۔ جنگ میں بھارت کو ہر محاذ پر منہ کی کھانی پڑی تھی۔

دسرے جانب صدر مملکت عارف علوی نے 6 ستمبر کے موقع پر دفاع وطن کی خاطر جانوں کی قربانی پیش کرنے والے شہداء کو سلام پیش کیا ہے۔

اپنے پیغام میں صدر عارف علوی نے کہا کہ پاکستان کی امن کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھا جائے، مسلح افواج کسی بھی قسم کے حالات سے نمٹنے اور بیرونی یا اندرونی محاذ پر ہر طرح کے چیلنج کا مقابلہ کرنے کے لئے پوری طرح تیار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سیلاب یا دیگر قدرتی آفات میں فوج کا مثالی کردار قابل تعریف ہے۔ علاوہ ازیں وزیراعظم شہباز شریف نے یوم دفاع کی مناسبت سے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ ہماری بہادر مسلح افواج نے دہشت گردی کے عفریت کو شکست دے کر 1965ء کی جنگ کے قابل فخر ورثے کو آگے بڑھایا۔

انہوں نے کہا کہ حالیہ سیلاب میں ہزاروں لوگوں کی جانیں بچانے میں مسلح افواج اور دیگر اداروں کے اہلکاروں کے کردار کو سراہتا ہوں۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ مشکل معاشی صورتحال کے باوجود اپنے دفاع کی مضبوطی سے غافل نہیں، مسئلہ کشمیر کا حل علاقائی امن اور ترقی کے لیے ضروری ہے۔

یوم دفاع، مزارِ اقبالؒ پر سادہ مگر پُروقار تقریب کا انعقاد

ملک بھر میں یوم دفاع قومی اور ملی جوش و جذبے کیساتھ منایا جا رہا ہے۔ یوم دفاع کی مناسبت سے علی الصبح لاہور میں 21 توپوں کی سلامی دی گئی۔

مساجد میں فوج کے شہداء کیلئے قرآن خوانی اور ملکی استحکام کیلئے دعائیں کی گئیں، جبکہ دیگر مذاہب کے ماننے والوں کی عبادت گاہوں میں بھی خصوصی دعائیہ تقریبات منعقد کی جا رہی ہیں۔

یوم دفاع کی مناسبت سے مزارِ اقبالؒ پر پھولوں کی چادر چڑھانے کی سادہ مگر پُروقار تقریب منعقد ہوئی۔ چھ ستمبر جب پاک فوج نے دشمن کے مذموم عزائم خاک میں ملا دئیے۔

فوجی جوانوں کی لازوال قربانیوں نے ملک و قوم کا دفاع کیا۔ اس دن کی مناسبت سے مزار اقبالؒ پر سادہ سی تقریب منعقد ہوئی۔ سیلاب زدگان سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے گارڈ کی تبدیلی کی تقریب کی بجائے صرف پھولوں کی چادر چڑھائی گئی۔

تقریب کا آغاز تلاوت قرآن پاک سے ہوا، جس کے بعد ڈی جی رینجرز پنجاب میجر جنرل سید آصف حسین نے پھولوں کی چادر چڑھائی۔

پاک فوج کی جانب سے گریژن کمانڈر میجر جنرل محمد شہباز خان نے مزار پر حاضری دی اور پھولوں کی چادر چڑھائی۔ دونوں افسران کی جانب سے ملک و قوم کی سلامتی اور سیلاب کی وجہ سے جاں بحق ہونیوالے افراد کی مغفرت کیلئے دعا کی گئی اور مہمان کی کتاب میں تاثرات بھی درج کئے گئے۔