آرمی چیف نے پورا دن سیلاب متاثرین کےساتھ گزارا، آئی ایس پی آر

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے پورا دن سیلاب متاثرین کے ساتھ گزارا۔ انہوں نے خیر پور اور قمبر شہداد کوٹ کے دور درازسیلاب سے متاثرہ علاقوں میں امدادی سرگرمیوں میں مصروف فوجی جوانوں سے ملاقات کی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق، پاک فوج کی جانب سے خیرپور کے گائوں جیلانی اور قمبر شہداد کوٹ میں مقامی آبادی کے لیے ریلیف اور میڈیکل کیمپ لگائے گئے۔ خیرپور اور قمبر شہداد کوٹ کے سیلاب متاثرین نے آرمی چیف کی آمد پر ان کو اپنے مسائل سے آگاہ کیا۔

آرمی چیف نے وہاں پر موجود فوجیوں سے ملاقات کی اور ان کی کوششوں کی تعریف کی۔ آرمی چیف نے زور دیا کہ ہر ضرورت مند پاکستانی کی مدد کرنا ایک عظیم مقصد ہے اور ہمیں اپنی بہترین صلاحیتوں کے مطابق ان کی خدمت کرنے پر فخر محسوس کرنا چاہیے۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے بلوچستان کے سیلاب زدہ علاقوں کا دورہ کیا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف گوٹھ صدوری، لاکھڑا اور لسبیلہ میں قائم فلڈ ریلیف اور میڈیکل کیمپوں میں گئے، سیلاب متاثرین اور امدادی کارروائیوں میں مصروف فوجیوں سے ملاقات بھی کی۔

جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا تھا کہ پاکستانی عوام ترجیح ہیں، سیلاب سے متاثرہ ہر شخص کی بحالی تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف نے ریسکیو، ریلیف اور بحالی میں سول انتظامیہ کی مدد کے لیے تمام وسائل استعمال کرنے کی ہدایت دی ہے۔

دسرے جانب پاک فوج نے سوات میں پھنسے 110 افراد کو ریسکیو کرلیا

پاک فوج نے سوات میں بارشوں کے بعد سیلابی صورتحال میں پھنسے 110 افراد کو ریسکیو کرلیا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق خوازہ خیلہ سے کانجو کینٹ سوات تک پھنسے 110 افراد ہیلی کاپٹر کے ذریعے ریسکیو کرلیا گیا ہے، جنہیں کھانا اور ضروری طبی امداد فراہم کی جا رہی ہے۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ سیلاب متاثرین کے لیے دیر اسکاؤٹس نے فلڈ ریلیف کنٹرول سینٹر قائم کردیا ہے جس کا لینڈ لائن نمبر 0945-825526 ہے۔

دوسری جانب موسم میں بہتری کے بعد آرمی ایوی ایشن کے 4 خصوصی ہیلی کاپٹروں نے پرواز کی اور سوات میں پھنسے ہوئے خاندانوں تک امدادی سامان پہنچایا۔

آئی ایس پی آر کا مزید کہنا تھا کہ کمراٹ کی پہاڑی چوٹی پر پھنسے لوگوں کو موسم بہتر ہوتے ہی فوجی ہیلی کاپٹروں کے ذریعے نکالا جائے گا۔