فورسز آپریشن : داعشی کمانڈر حیات محمد ہلاک

سی ٹی ڈی ملاکنڈ ریجن اور انٹیلیجنس ایجنسی نے ضلع دیر لوئر اور باجوڑ کے بارڈر پر تنگے لنڈے شاہ میں دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کے دوران داعش سے تعلق رکھنے والا ایک دہشتگرد کمانڈر ہلاک جبکہ متعدد فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔

ذرائع کے مطابق دوران سرچ اینڈ سٹرائیک آپریشن دہشت گردوں نے فورسز پر فائرنگ کھول دی، دہشت گردوں اور فورسز کے مابین فائرنگ کا تبادلہ گھنٹوں تک جاری رہا۔

فائرنگ تھم جانے کے بعد علاقے میں سرچ اینڈ کلئیرنس آپریشن کے دوران ایک دہشت گرد ہلاک جبکہ متعدد دہشت گرد دوران فائرنگ موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔

ہلاک دہشت گرد کی شناخت حیات محمد عرف سلمان کے نام سے ہوئی، جس کے قبضے سے بھاری اسلحہ اور گولہ بارود برآمد ہوا۔

مذکورہ دہشت گرد نے حال ہی میں سید بادشاہ سابقہ تحصیل ناظم (جے یو آئی) ضلع باجوڑ پر حملہ کرکے ذمہ داری قبول کی تھی، جس میں مذکورہ ناظم 6 ساتھیوں سمیت شدید زخمی ہوگئے تھے۔

ہلاک ہونے والا دہشتگرد پولیس کانسٹبل جہانگیر خان اور مفتی بشیر محمد کی ٹارگٹ کلنگ اور آئی ای ڈی حملے کے ذریعے سکول اساتذہ محمد اسماعیل، شفیع اللہ اور عبدالرحمان کو شہید کرنے سمیت بھتہ خوری میں بھی ملوث تھا۔

پولیس، لیویز اور سیکیورٹی فورسز پر فائرنگ، ہینڈ گرینڈ اور متعدد آئی ای ڈی حملوں کے علاوہ دوران نماز جمعہ جامع مسجد صدیق اکبر باجوڑ کے ساتھ آئی ای ڈی بلاسٹ، جس میں نمازی زخمی ہوئے تھے، میں بھی ملوث تھا۔

دہشت گرد حیات محمد عرف سلمان داعش کا اہم کمانڈر تھا اور کاونٹر ٹررازم ڈیپارٹمنٹ کو درجن سے زائد مقدمات میں مطلوب تھا۔

دوران تلاشی ہلاک دہشتگرد کی جیب سے عبدالخالق ولد بہرام خان کے نام سے جعلی قومی شناختی کارڈ بھی برآمد ہوا۔ صوبائی حکومت نے دہشتگرد حیات محمد عرف سلمان کی سر کی قیمت 20 لاکھ روپے مقرر کی تھی۔