قبائلی اضلاع کے طلبہ کا کوٹہ ڈبل لیکن عملی نہ ہونے کیخلاف مظاہرہ

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

خیبرپختونخوا میں ضم ہونے والے قبائلی اضلاع کے طلبہ نے 2017 میں میڈیکل، انجینئرنگ اور دیگر تعلیمی اداروں میں سیٹیں ڈبل ہونے کا وعدہ تاحال پورا نہ ہونے کے خلاف پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا ہے۔

احتجاجی طلبہ کا کہنا تھا کہ منسٹری آف سیفران اور منسٹری آف ہیلتھ نے ان کی سیٹیں ڈبل کرنے کی منظوری دی ہے، صوبائی کابینہ نے سمری بھی تیار کی ہے مگر اب تک اس کی منظوری نہ ہوسکی۔

مظاہرین کا کہنا تھا کے خیبر میڈیکل یونیورسٹی کے وائس چانسلر نے سمری منظور ہونے تک میرٹ لسٹ موخر کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر صوبائی حکومت نے سیٹس ڈبل کرنے کی سمری منظور نہیں کی تو یہ ان کے ساتھ نا انصافی ہوگی۔

مظاہرین نے مزید کہا کہ وفاقی حکومت نے کہا تھا کہ قبائلی اضلاع کی محرومیاں ختم کی جائیں گی لیکن یہاں تو دن بہ دن ان کی مایوسیوں میں اضافہ ہو رہا ہے۔