ضلع مہمندمیں ہیپاٹائٹس کنٹرول پروگرام کے تحت سکریننگ کیمپ کا انعقاد

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

خیبر پختونخوا کے ساتھ نیے قبائلی ضلع مہمند میں ہیپاٹائٹس کنٹرول پروگرام کے تحت سکریننگ کیمپ کا انعقاد ہوا۔

یہ سکریننگ کیمپ ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز قبائلی اضلاع ڈاکٹر شاہ فیصل کی ہدایت پر پنڈالائی میں 105 لوگوں کےسکریننگ ٹیسٹ ہوا جس میں ایک ہیپاٹائٹس سی اور ایک ہیپاٹائٹس بی کی تشخیص ہو ئی۔

کیمپ میں شریک ڈاکٹروں کا کہنا تھا کہ ہرشہری کا ہیپاٹائٹس بی اور سی کا ٹیسٹ کرایا جائے ملک میں ہیپاٹائٹس بی اور سی کے مریضوں کی تعداد 2کروڑ کے قریب ہے اور روزانہ سو سے زائدمریض خطرناک وائرس کے ہاتھوں سسک سسک کر دم توڑ رہے ہیں اگر اس مہلک مرض کا علاج اور خاتمہ نہ کیا گیا تو ہیپاٹائٹس دوسرا پولیو بن سکتا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں صرف 10سے 20 فیصد لوگ اپنی بیماری سے آگاہ ہیں اور 80فیصد اس خاموش قاتل سے لا علم ہیں، انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ہیپاٹائٹس سی کی شرح 7فیصد ہےاور دنیا کے ان ممالک میں شامل ہے جہاں ہیپاٹائٹس سی تیزی سے پھیل رہا ہے. انہوں نے مطالبہ کیا کہ ہر پاکستانی کی ہیپاٹائٹس کی اسکریننگ ہونی چاہیے۔

یاد رہے کہ پاکستان میں نزلہ، زکام اور دل کی بیماریاں انسان کو متاثر کرتی ہیں لیکن ان سے متاثرہ انسان دوبارہ صحت مند زندگی بسر کرتا ہے لیکن ہیپاٹائٹس بی اور سی کے نتیجے میں ہزاروں انسان موت کے منہ میں جا رہے ہیں۔