کشمیر : غیر ملکی سیاحوں کی آمد میں 95 فیصد کی کمی

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

مقبوضہ کشمیر میں گزشتہ تین سالوں میں غیر ملکی سیاحوں کی آمد میں تقریباً 95.22 فیصد کمی آئی ہے تاہم گھریلو سیاحوں کی آمد میں تقریباً 20 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

سرکاری اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ تین برسوں میں 2019ء میں وادی کشمیر میں غیر ملکی سیاحوں کی آمد کی سب سے زیادہ تعداد ریکارڈ کی گئی تھی۔

رپورٹ مطابق 2019ء میں کم از کم 33 ہزار 779 غیر ملکی سیاحوں اور 5 لاکھ 31 ہزار 753 بھارتی سیاحوں نے وادی کشمیر کا دورہ کیا تھا۔ اگلے 2020ء میں، غیر ملکی اور ملکی سیاحوں کی آمد میں بالترتیب 89 فیصد اور 93 فیصد سے زیادہ کمی واقع ہوئی۔

سرکاری اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ اس مالی سال میں کل 3897 غیر ملکی اور 37 ہزار 370 ملکی سیاحوں نے وادی کا دورہ کیا۔

اسی طرح گزشتہ مالی 2021ء میں وادی کشمیر میں غیر ملکی سیاحوں کی آمد میں تقریباً 95.22 فیصد کی کمی واقع ہوئی تھی، تاہم ملکی سیاحوں کی آمد میں تقریباً 20 فیصد اضافہ ہوا تھا۔

اس سال صرف 1615 غیر ملکی اور 6 لاکھ 64 ہزار 199 ملکی سیاح کشمیر پہنچے تھے۔ یہ معلومات محکمہ سیاحت اور منصوبہ بندی کے ڈپٹی ڈائریکٹر نے کارکنوں ایم ایم شجاع کی طرف سے دائر کردہ حق معلومات (آر ٹی آئی) درخواست کے جواب میں ظاہر کی ہے۔