عالمی شہرت یافتہ کوہ پیما لٹل کریم انتقال کر گئے

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

عالمی شہرت یافتہ کوہ پیما عبد الکریم عرف لٹل کریم انتقال کر گئے۔ وہ گزشتہ ایک سال سے بیمار تھے۔ 72 سالہ کوہ پیما لٹل کریم کا تعلق بلتستان کے ضلع گانچھے کے گائوں ہوشے سے تھا۔

لٹل کریم نے بغیر آکسیجن کئی چوٹیوں کو سر کیا، انہوں نے بغیر آکسیجن 25 کلو وزن کے ساتھ مشہ بروم چوٹی کو بھی سر کر کے ریکارڈ قائم کیا تھا۔

لٹل کریم پاکستان سے زیادہ یورپی ممالک میں مشہور تھے۔ 1985 اور 1997 میں لٹل کریم کی کوہ پیمائی کے میدان میں خدمات کے اعتراف میں کئی فلمیں بھی بنیں۔

یورپ میں ان کے مداحوں میں دنیائے فٹبال کے بادشاہ کرسٹیانو رونالڈو بھی شامل ہیں۔ چھوٹے قد کے لٹل کریم نے ستر کی دہائی میں غیر ملکی کوہ پیمائوں کیلئے پورٹر کا کام شروع کیا۔

انھوں نے ستّر، اسّی اور نوّے کی دہائی میں دنیا کے ہر بڑے کوہ پیما کی گلگت بلتستان کے دشوار پہاڑوں پر کوہ پیمائی میں مدد کی تھی۔

لٹل کریم نے کوہ پیمائی اور بطور پورٹر سے حاصل ہونے والی ساری آمدنی کو اپنے گائوں ہوشے میں تعلیم اور صحت پر خرچ کیا۔

گھڑی بنانے والی دنیا کی مشہور کمپنی رولیکس نے انہیں ایک قمیتی گھڑی تحفے میں دی تھی جبکہ سپین کے ایک ادارے نے ہوٹل بنا کے دیا تھا اسے بھی انہوں نے تعلیم کیلئے وقف کر دیا۔

دنیائے کوہ پیمائی کی مشہور شخصیت نے اپنے آخری دنوں کسمپرسی میں گزاری۔ لٹل کریم نے پسماندگان میں چار بیٹے اور چار بیٹیاں سوگوار چھوڑی ہیں۔