افغانستان کو اہم ادویات فراہم کرنے کے لیے تیار

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

پاکستان افغانستان کو نارکوٹکس کوٹے کی ادویہ کے علاوہ دیگر اہم ادویات فراہم کر رہا ہے، افغانستان کو سرکاری سطح پر 50 کروڑ روپے کی دوائیں فراہم کی جائیں گی۔

ذرائع کے مطابق پاکستان نے افغانستان کو دوائیں فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے، افغانستان کو سرکاری سطح پر ادویات فراہمی کا آغاز جلد ہوگا، اس سلسلے میں وزارت قومی صحت نے ایک رپورٹ بھی تیار کر لی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ افغانستان کو پاکستان کی جانب سے پچاس کروڑ روپے کی دوائیں فراہم کی جائیں گی، جب کہ افغان حکومت کو درکار دواؤں کی مالیت 40 کروڑ روپے ہے۔

افغان حکومت نے پاکستان سے دواؤں کی فراہمی کی درخواست کی تھی، اور ادویات کی ایک فہرست بھی فراہم کی گئی ہے، ذرائع وزارت صحت کا کہنا ہے کہ پاکستانی حکومت افغانستان کی مطلوبہ فہرست کے مطابق دواؤں کی خریداری کرے گی، اور خریداری کی ذمہ داری پمز اسپتال کی ہے۔

دی گئی فہرست کے مطابق افغانستان کو دل، معدہ و جگر، بلڈ پریشر، نفسیاتی امراض، اور جان بچانے والی دوائیں فراہم کی جائیں گی۔

تاہم وزارت صحت کا کہنا ہے کہ افغانستان کو درکار بعض دوائیں فراہم نہیں کی جائیں گی، مارفین اور بپرینارفین سے تیار دوائیں نارکوٹکس کوٹے کی ہیں، یہ ادویات مارکیٹ میں دستیاب نہیں ہیں۔

واضح رہے کہ اس سے قبل پاکستانی فارما انڈسٹری نے بھی افغانستان کو ادویات عطیہ کی تھیں جن کی مالیت 17 کروڑ روپے کی تھی۔