این سی او سی نے اہم پابندیوں کا فیصلہ کرلیا

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

ملک میں کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر این سی او سی نے اہم پابندیوں کا فیصلہ کرلیا ہے۔ نئی پابندیوں کا فیصلہ صوبوں کی مشاورت سے کیا گیا ہے، پابندیوں کا اطلاع 20 سے 31 جنوری تک ہو گا۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر (این سی او سی ) نے اِن ڈور ڈائننگ پابندی عائد کر دی ہے۔ یکم فروری سے 12 سال سے زائد عمر کے بچوں کے لیے ویکسینیشن لازمی قرار دی گئی ہے۔

آؤٹ ڈور تقریبات میں 300 افراد شامل ہو سکتے ہیں جبکہ 10 فیصد سے کم والی شرح والے شہروں میں آؤٹ ڈور تقریبات میں 500 افراد شامل ہو سکتے ہیں۔

این سی او سی نے فیصلہ کیا ہے کہ تقریبات میں صرف ویکسینیٹڈ افراد ہی شریک ہو سکیں گے۔ این سی او سی 27 جنوری کو اجلاس میں صورتحال کا جائزہ لے گا۔

خیبر پختونخوا : ایک دن میں اومیکرون کے 33 نئے مریض سامنے آگئے

خیبر پختونخوا میں ایک ہی دن میں کورونا کے نئے ویرینٹ اومیکرون کے 33 نئے مریض سامنے آگئے۔

خیبر پختونخوا میں ایک ہی روز میں اومیکرون کے نئے 33 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں، خیبر میڈیکل یونیورسٹی کی ریفرنس لیب نے نئے کیسز کی تصدیق کردی۔

رپورٹ کے مطابق 6 پشاور، 6 نوشہرہ، اور 21 مالاکنڈ سے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جب کہ متاثرہ افراد میں 18 مرد اور 15 خواتین شامل ہیں جن کی عمریں 20 سے 60 کے درمیان ہیں۔

پاکستان میں اومیکرون کا پھیلاؤ، آئندہ 2 سے 3 ہفتے انتہائی خطرناک

پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن نے اومیکرون وائرس کے پھیلاؤ کے حوالے سے آئندہ 2 سے 3 ہفتے انتہائی خطرناک قرار دے دیا۔

اکستان میڈیکل ایسوسی ایشن نے اومیکرون کیسز میں اضافے پر اظہار تشویش کرتے ہوئے کہا آئندہ 2 سے 3 ہفتے وائرس پھیلاؤ کے حوالے سے انتہائی خطرناک ہیں۔

پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کا کہنا تھا کہ خدشہ ہے اومیکرون اپنی نوعیت تبدیل کرسکتا ہے، کیسز تیزی سے پھیل رہے ہیں، فوری مؤثر اقدامات کئے جائیں، صورتحال کنٹرول کرنے کیلئے ماضی کی طرح اقدامات کرنا پڑیں گے۔

خیال رہے پاکستان میں کورونا کیسز کی شرح میں اضافہ جاری ہے اور کراچی میں کورونا مثبت آنے کی شرح تقریباََ 39 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔

شہر میں گزشتہ روز 7099 ٹیسٹ کیے گئے، جس میں سے 2754 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی جبکہ حیدرآباد میں کورونا کیسز کی شرح 13.98 فیصد رہی۔

ذرائع نے بتایا کہ 24 گھنٹے میں اسلام آباد میں کورونا کی شرح 8.86 فیصد، راولپنڈی میں 7.60 فیصد، لاہور میں کورونا کی شرح 12.87 فیصد، گجرات میں 1.19، ملتان میں 2.58، بہاولپور میں 1.29 اور فیصل آباد میں 1.12 فیصد رہی۔