پشاور ایڈورڈز کالج : انٹرویو کے بعد مسیحی برادری کے پرنسپل تعینات

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

ایڈورڈز کالج پشاور میں انٹرویو کے بعد مسیحی برادری سے تعلق رکھنے والے پرنسپل کی تعیناتی کی منظوری دے دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق آج پشاور ایڈورڈز کالج میں پرنسپل تعیناتی کے معاملے پر بورڈ آف گورنرز کا اجلاس منعقد ہوا، اجلاس کی صدارت گورنر کے پی شاہ فرمان نے کی۔

انٹرویو کے لیے 5 میں سے صرف 3 امیدوار اجلاس میں پیش ہوئے، ایک امیدوار ڈاکٹر شرون ہانوک طے شدہ اہلیت اور تجربے پر پورا اترے، جس کے بعد ڈاکٹر شرون ہانوک کی پرنسپل ایڈورڈز کالج تعیناتی کی منظوری دے دی گئی۔

گورنر شاہ فرمان نے اس موقع پر کہا کہ ایڈورڈز کالج کے پرنسپل کی تعیناتی کے سلسلے میں مجھے تنقید کا نشانہ بنایا گیا، لیکن شروع دن سے میرا مؤقف تھا کہ کالج کا پرنسپل مسیحی برادری سے ہوگا۔

انھوں نے کہا میری سنجیدہ کوششوں کے باوجود بلاوجہ مجھے تنقید کا نشانہ بنایا گیا، ہم ایڈورڈز کالج کی تاریخی علمی حیثیت کو برقرار رکھنا چاہتے ہیں۔