قبائلی اضلاع میں خودساختہ پولیس چیک پوسٹوں کا نوٹس لیا جائے

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

افغان ٹرانسپورٹ اونر ایسوسی ایشن کے صوبائی صدر محمد نور احمد زئی نے الزام عائد کیا ہے کہ کارخانوں پھاٹک پر ٹریفک پولیس مال بردار گاڑیوں کا پانچ سو سے ڈھائی ہزار تک کا چالان کرتی ہے جس کی وجہ سے دونوں ممالک کے درمیان تجارت متاثر ہوئی ہے۔

پشاور پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے محمد نور احمدزئی کا کہنا تھا کہ طورخم گیٹ 24 گھنٹے کھلا رہنے کے باوجود صرف تیس فیصد گاڑیوں کی کلیئرنس کی جاتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ نئے ضم شدہ اضلاع میں کچھ عرصہ سے جابجا پولیس کی خود ساختہ چیک پوسٹیں قائم کی گئی ہیں جنہیں صوبائی اسمبلی کے چند اراکین کی پشت پناہی حاصل ہے۔

محمد نور احمدزئی نے وفاقی حکومت سے اس غیر قانونی عمل کا نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان اپنا یہ دعویٰ پورا کریں کہ طورخم پر یومیہ ہزاروں گاڑیاں سرحد پار جاتی ہیں۔