وزیراعظم نے مرکز سے لے کر تحصیلوں تک تمام کمیٹیاں ختم کردیں

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

خیبر پختونخوا کے بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں شکست کے بعد پاکستان تحریک انصاف نے کئی بڑے فیصلے کیے ہیں۔

بلدیاتی الیکشن کے مایوس کن نتائج کے بعد تشکیل دی گئی نئی 21 رکنی آئینی کمیٹی کا اجلاس وزيراعظم کی صدارت میں ہوا جس میں میں ہنگامی فیصلے کیے گئے۔

اس حوالے سے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے پریس کانفرنس میں بتایا کہ وزیراعظم عمران خان نے مرکز سے لے کر تحصیلوں تک تمام کمیٹیاں ختم کردیں ہیں،کسی رشتے دارکوپارٹی ٹکٹ دینے کا فیصلہ مقامی قیادت نہیں کرے گی، پارٹی کا نیا انتظامی ڈھانچہ تشکیل دیا جائے گا۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) اس وقت بھی خیبرپختونخوا کی سب سے بڑی جماعت ہے.

انہوں نے کہا کہ شکایات موصول ہوئیں ہیں کہ کے پی بلدیاتی انتخابات میں ٹکٹیں خاندانوں میں تقسیم ہوئیں، وزیراعظم نے میرٹ کے برعکس خاندانوں میں ٹکٹ بانٹنے پر ناراضی کا اظہار کیا۔

فواد چوہدری نے مزید کہا کہ وزیراعظم نے تحریک انصاف کی تمام تنظیموں کو توڑنے کا فیصلہ کیا ہے، تحریک انصاف نے نئی آئینی کمیٹی تشکیل دے دی ہے، آئینی کمیٹی میں تمام قیادت شامل ہوگی، مکینزم بنایا جائے گا جس کے تحت ٹکٹ کی تقسیم ہوگی۔

وزیر اطلاعات نے بتایا کہ تحریک انصاف کے تمام پارلیمانی بورڈز بھی تحلیل کردیے گئے ہیں، تحریک انصاف کی ملک بھر میں تمام تنظیموں کو توڑ دیا گیا ہے، مرکز سے لے کر تحصیلوں تک تمام تنظیموں کو تحلیل کردیا گیا ہے۔

فواد چوہدری نے مزید کہا کہ وزیراعظم کو کے پی الیکشن سے متعلق ابھی تک باضابطہ رپورٹ پیش نہیں کی گئی، 21رکنی کمیٹی کے سامنے سب چیزیں آئیں گی جو پھر ان کو جانچے گی۔

وزیر اطلاعات نے مزید کہا کہ کسی کو اگر لیڈر مانا جاتا ہے تو وہ عمران خان ہیں، تحریک انصاف کے سوا کوئی ایسی پارٹی نہیں جو اتنی بڑی تعداد میں ٹکٹ جاری کرے.

انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف ملک کی سب سے بڑی جماعت ہے، تحریک انصاف نیچے جاتی ہے تو پاکستان کی سیاست نیچے جائے گی۔

فواد چوہدری نے کہا کہ وزیراعظم نے کے پی الیکشن کے حوالے سے وزیراعلیٰ محمود خان، پرویز خٹک سے بات چیت کی

وزیراعظم نے تحریک انصاف کی کے پی کی کارکردگی پر عدم اعتماد کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ ولیج کونسل کے انتخابات کے نتائج کے مطابق تحریک انصاف اب بھی بڑی جماعت ہے۔

بلدیاتی انتخابات: وزیراعظم نے 21 رکنی سپریم کمیٹی قائم کردی

دسرے جانب وزیراعظم عمران خان نے پنجاب اور خیبرپختونخوا میں بلدیاتی انتخابات کے محاذ کے لیے 21 رکنی سپریم کمیٹی قائم کردی۔

ذرائع کے مطابق سپریم کمیٹی کا پہلا اجلاس آج اسلام آباد میں طلب کیا گیا ہے جس کی صدارت وزیراعظم عمران خان کریں گے جب کہ اجلاس میں وزیراعلیٰ عثمان بزدار،گورنرچوہدری سرور ، وزیر بلدیات محمود الرشید، سینیٹر سیف اللہ نیازی، عامر کیانی، فواد چوہدری، حماد اظہر، شفقت محمود، وزیر اعلیٰ کے پی محمود خان، اسد قیصر، پرویز خٹک اور مراد سعید بھی شریک ہوں گے۔

ذرائع کا کہنا ہےکہ اجلاس میں کے پی کے بلدیاتی انتخاب کے دوسرے مرحلے کے حوالے سے سیاسی لائحہ عمل طے کیا جائے گا اور پنجاب میں بلدیاتی انتخابی معرکے کے حوالے سے بھی اہم فیصلے متوقع ہیں۔

ذرائع کے مطابق پی ٹی آئی بلدیاتی انتخاب کے اگلے محاذ کے لیے قبل از وقت صف بندی کرے گی، پنجاب میں پہلے مرحلے پر ڈویژنل ہیڈکوارٹرز پر میٹروپولٹین کے لیے امیدواروں کاجائزہ لیاجائے گا جس میں لاہور، گوجرانوالہ ،فیصل آباد، ملتان، ڈی جی خان، ساہیوال، بہاولپور، سرگودھا اور راولپنڈی کے لیے میئرز کے پارٹی امیدواروں کاجائزہ لیاجائے گا،

ذرائع کا کہنا ہےکہ گجرات اورسیالکوٹ میں بھی میئرز کے لیے سیاسی شخصیات کے ناموں پر غور کیاجائے گا جب کہ کے پی میں بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے سے متعلق حکمت عملی مرتب کی جائے گی۔