افغانستان سے منشیات پاکستان اسمگل کرنے کی کوشش ناکام

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

کسٹمز حکام نے طورخم بارڈ پر دو بڑی کارروائیوں میں ساڑھے 11 کروڑ روپے مالیت کی ہیروئن، چرس افیون اور آتشی مواد (فائر کریکر) پاکستان اسمگل کرنے کی کوشش ناکام بنادی۔

فیڈرل بورڈ ریونیو (ایف بی آر) کے مطابق محکمہ کسٹمز کے حکام نے پہلی کارروائی میں کروڑ روپے مالیت کی منشیات جبکہ دوسری کارروائی میں پیاز کی آڑ میں فائر کریکر اسمگل کرنے کی کوشش بھی ناکام بنادی۔

انہوں نے بتایا کہ محکمہ کسٹمز نے افغانستان سے کروڑوں روپے مالیت کی منشیات پاکستان اسمگل کرنے کی کوشش ناکام بنادی ہے۔

فراہم کردہ معلومات کے مطابق کسٹمز حکام نے طورخم پاک افغان بارڈر پر پکڑی جانے والی منشیات کی مالیت ساڑھے گیارہ کروڑ روپے سے زائد کی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ منشیات طورخم بارڈ کے راستے پاکستان داخل ہونے والے ٹرک کے خفیہ خانوں میں چھپارکھی تھی، طورخم پر واقع کسٹمز اسٹیشن پر افغانستان سے پاکستان داخل ہونے والے ٹرک کی جامع تلاشی لی گئی۔

ان کا کہنا تھا کہ منشیات اسمگل کے لیے ٹرک میں بنائے گئے خفیہ خانے ویلڈنگ مشین کے ذریعے کھولے گئے۔کسٹمز حکام کے مطابق ٹرک کے خفیہ خانوں سے کئی کلو گرام ہیروئن، چرس اور افیون سمیت دیگر منشیات برآمد کرکے ضبط کرلی گئی ہے۔

علاوہ ازیں کسٹمز حکام کے مطابق دوسری کارروائی میں ٹرک کے خفیہ خانوں سے ایک کروڑ روپے سے زائد مالیت کا 5 ہزار 413 کلو گرام آتشی مواد(فائر کریکر)برآمد کرکے ضبط کرلیا گیا۔

کسٹمزحکام نے دونوں کیسوں میں ایف آئی آر درج کرلی ہے اور مبینہ اسمگلنگ میں ملوث عناصر کے خلاف مقدمہ درج کرکے مزید کارروائی شروع کردی۔