خیبر پختونخوا بلدیاتی الیکشن، تحریک انصاف نے 11 نشستیں حاصل کرلیں

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

صوبہ خیبر پختونخوا کے 17 اضلاع میں بلدیاتی الیکشن کے غیر سرکاری نتائج کا سلسلہ جاری ہے، انتخابات میں 1 کروڑ 26 لاکھ 68 ہزار 862 ووٹرز نے اپنا حق رائے دہی استعمال کیا۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ خیبر پختونخوا کے بلدیاتی انتخابات کے غیر حتمی و غیر سرکاری نتائج کا سلسلہ جاری ہے۔ چیئرمین تحصیل کی 27 اور میئر کی 2 نشستوں کا غیر سرکاری نتیجہ آگیا، تحریک انصاف نے اب تک 11 اور جمعیت علمائے اسلام نے 6 چیئرمین کی نشستیں جیت لیں۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق 5 نشستوں پر آزاد امیدوار کامیاب ہوگئے، عوامی نیشنل پارٹی نے 3 اور مسلم لیگ نون نے 2 نشستیں حاصل کرلیں۔

ضلع بونیر کی تحصیل چغر زئی میں چیئرمین کی نشست کے لیے تمام پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق تحریک انصاف کے امیدوار شریف خان 8 ہزار 608 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے، آزاد امیدوار اقبال خان 4 ہزار 542 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

پشاور کے میئر کی نشست کے لیے 139 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق جمعیت علمائے اسلام ف کے امیدوار زبیر علی 12 ہزار 551 ووٹ لے کر آگے جبکہ تحریک انصاف کے امیدوار رضوان بنگش 11 ہزار 534 ووٹ لے کر پیچھے ہیں۔

ضلع نوشہرہ کی تحصیل پبی میں چیئرمین کی نشست کے لیے 65 پولنگ اسٹیشن کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار غیور علی 9 ہزار 283 ووٹ لے کر آگے جبکہ تحریک انصاف کے امیدوار اشفاق احمد 9 ہزار 169 ووٹ لے کر پیچھے ہیں۔

ضلع ہری پور کی تحصیل خان پور میں چیئرمین کی نشست کے مکمل غیر حتمی نتائج کے مطابق مسلم لیگ نون کے امیدوار راجہ ہارون 32 ہزار 361 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے، تحریک انصاف کے امیدوار راجہ شہاب 26 ہزار 296 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

مہمند کی تحصیل بائیزئی میں چیئرمین کی نشست کے لیے 22 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتائج کے مطابق جمعیت علمائے اسلام (ف) کے امیدوار مولانا بسم اللہ 2 ہزار 872 ووٹ لے کر آگے جبکہ آزاد امیدوار ملک زاہد 2 ہزار 232 ووٹ لے کر پیچھے ہیں۔

تحصیل نوشہرہ میں چیئرمین کی نشست کے لیے 74 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے امیدوار اسحٰق خٹک 12 ہزار 533 ووٹ لے کر آگے ہیں جبکہ جمعیت علمائے اسلام (ف) کے امیدوار مفتی حاکم علی 10 ہزار 614 ووٹ لے کر پیچھے ہیں۔

پشاور کی تحصیل پشتہ خرہ میں چیئرمین کی نشست کے لیے 76 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتائج کے مطابق جمعیت علمائے اسلام (ف) کے امیدوار محمد ہارون 6 ہزار 86 ووٹ لے کر آگے جبکہ تحریک انصاف کے امیدوار عبد الجبار 5 ہزار 936 ووٹ لے کر پیچھے ہیں۔

نوشہرہ کی تحصیل جہانگیرہ میں چیئرمین کی نشست کے لیے 51 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے کامران رازق 9 ہزار 837 ووٹ لے کر آگے جبکہ عوام نیشنل پارٹی کے امیدوار سکندر مسعود 9 ہزار 376 ووٹ لے کر پیچھے ہیں۔

تحصیل اپر مہمند میں چیئرمین کی نشست کے لیے 50 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتائج کے مطابق جمعیت علمائے اسلام (ف) کے مولانا تاج ولی 7 ہزار 987 ووٹ لے کر آگے جبکہ تحریک انصاف کے امیر اللہ جنیدی 3 ہزار 957 ووٹ لے کر پیچھے ہیں۔

ہنگو کی تحصیل تھل میں چیئرمین کی نشست کے لیے تمام پولنگ اسٹیشنز کے مکمل غیر حتمی نتائج کے مطابق جمعیت علمائے اسلام ف کے مفتی عمران 14 ہزار 233 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے جبکہ تحریک انصاف کے امیدوار 5 ہزار 808 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

بونیر کی تحصیل گاگرہ میں چیئرمین کی نشست کے لیے تمام پولنگ اسٹیشنز کے مکمل غیر حتمی نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے سالار جہان باچا 11 ہزار 900 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے جبکہ جمعیت علمائے اسلام (ف) کے رشید احمد 7 ہزار 72 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

بونیر کی تحصیل گدیزئی میں چیئرمین کی نشست کے لیے تمام پولنگ اسٹیشنز کے مکمل غیر حتمی نتیجے کے مطابق تحریک انصاف کے شیر عالم 11 ہزار 200 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے جبکہ عوامی نیشنل پارٹی کے شاہجہاں 6 ہزار 900 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

تحصیل ہنگو میں چیئرمین کی نشست کے لیے تمام پولنگ اسٹیشنز کے مکمل غیر حتمی نتائج کے مطابق آزاد امیدوار عامر غنی 16 ہزار 535 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے جبکہ جمعیت علمائے اسلام کے محمد قاسم 10 ہزار 350 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

ضلع بونیر کی تحصیل ڈگر میں چیئرمین کی نشست کے لیے تمام پولنگ اسٹیشنز کے مکمل غیر حتمی نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے روزی خان 8 ہزار 540 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے جبکہ جمعیت علمائے اسلام کے عارف اللہ 7 ہزار 800 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

ڈیرہ اسمعٰیل خان کی تحصیل پرووا میں چیئرمین کی نشست کے لیے تمام پولنگ اسٹیشنز کے مکمل غیر سرکاری نتائج کے مطابق آزاد امیدوار فخر اللہ 21 ہزار 400 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے جبکہ جمعیت علمائے اسلام کے امتیاز بلوچ 18 ہزار 200 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔