بکا خیل واقعے پر الیکشن کمیشن کا نوٹس، فریقین طلب

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

الیکشن کمیشن نے بکا خیل میں امن وامان خراب کرنے کے الزام میں صوبائی وزیر شاہ محمد خان کو طلب کرلیا ہے۔

ذرائع کے مطابق بکاخیل میں امن وامان کی صورتحال خراب کرنے کا الزام صوبائی وزیر کے خاندان پرعائد کیا گیا ہے، شاہ محمد خان کا بیٹا مامون رشید مئیر کے لیے امیدوار ہے۔

ڈپٹی کمشنر بنوں نے اپنی ابتدائی رپورٹ الیکشن کمیشن کو بھجوادی ہے، جس میں کہا گیا کہ تحصیل بکاخیل کے پولنگ اسٹیشنز میں تیس سے زائد افراد نے داخل ہو کر چھ پولیس اہلکاروں اور خواتین سمیت عملہ کو یرغمال بنایا۔

ڈی سی کے مطابق بکاخیل کے پولنگ اسٹیشنز داخل ہونے والوں میں پی ٹی آئی کے کارکنان بھی شامل تھے۔

واقعے رپورٹ ہونے کے بعد چیف الیکشن کمشنر کی زیر صدارت اہم اجلاس ہوا، اجلاس میں رپورٹس کا جائزہ لینے کے بعد شکایت کنندگان اور متعلقہ فریقین کوبائیس دسمبر کو طلب کرلیا گیا ہے۔

اس کے علاوہ چیف کمشنر نے پشاور کے پولنگ اسٹیشن پر قبل از وقت مبینہ طور پر ٹھپے لگانے کی تحقیقات کرانے کی ہدایت جاری کیں ہیں۔

واضح رہے کہ تحصیل بکاخیل کے پانچ پولنگ اسٹیشنز پر ناخوشگوار واقعات پر چیف الیکشن کمشنر نے تحصیل بھر میں پولنگ معطل کردی ہے۔

دوسری جانب خیبر پختونخوا میں بلدیاتی الیکشن مانیٹرنگ سیل ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنر اسلام آباد آفس میں قائم کیا گیا ہے.

ترجمان الیکشن کمیشن کے مطابق چیف الیکشن کمشنر اور سیکرٹری الیکشن کمیشن مرکزی کنٹرول روم اسلام آباد سے پولنگ کے عمل کی نگرانی کر رہے ہیں۔

بکاخیل میں بلدیاتی انتخابات کی پولنگ ملتوی

دوسری جانب الیکشن کمیشن نے ضلع بنوں کی تحصیل بکاخیل میں بلدیاتی انتخابات کی پولنگ ملتوی کر دی۔

الیکشن کمیشن کے ترجمان کے مطابق بکاخیل میں پولنگ کی نئی تاریخ کا اعلان بعد میں کیا جائے گا، چیف الیکشن کمشنر نے اس سلسلے میں 3 رکنی انکوائری کمیٹی تشکیل دی ہے۔

ترجمان الیکشن کمیشن نے بتایا کہ کمیٹی مکمل تحقیقات کر کے 7 روز میں اپنی رپورٹ الیکشن کمیشن کو دے گی، کمیٹی اسپیشل سیکریٹری ظفر اقبال کی سربراہی میں بنائی گئی ہے۔

الیکشن کمیشن کے ترجمان کا ہے کہ کمیٹی میں ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل لاء خرم شہزاد اور ڈائریکٹر الیکشن کمیشن خیبر پختون خوا خوش حال زادہ شامل ہیں۔

دوسری جانب چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ نے بنوں کی تحصیل بکا خیل کے واقعے کا نوٹس لے لیا۔