درہ آدم خیل : وفاقی وزیر شبلی فراز پر نامعلوم افراد کا حملہ

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

وفاقی وزیرشبلی فراز پر درہ آدم خیل میں نامعلوم افراد نے حملہ کیا ہے جس میں وہ معجزانہ طور ‏پر محفوظ رہے۔ وفاقی وزیر شبلی فراز آبائی علاقے کوہاٹ سے پشاور آ رہےتھے ‏کہ درہ آدم خیل کے مقام پر نامعلوم افراد نے گاڑی پر حملہ کیا۔

شبلی فراز نے حملے سے متعلق بتایا ہے کہ الحمدللہ محفوظ ہوں تاہم ڈرائیور زخمی ہے جسے ‏علاج کیلئے پشاور منتقل کر رہے ہیں۔ وفاقی وزیرشبلی فراز اپنے گاڑی میں سوار تھے اور سیکورٹی گارڈز بھی ہمراہ تھے۔ فوری طور پر ‏حملے سے متعلق تفصیلات سامنے نہیں آسکیں۔

چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی، وفاقی وزیر اطلاعات فوادچوہدری، وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار ‏سمیت دیگر اعلیٰ شخصیات نے وفاقی وزیرشبلی فراز پر حملےکی شدید مذمت کی ہے۔

صادق سنجرانی نے سینیٹر شبلی فراز کو ٹیلیفون کیا اور ان کی خیریت دریافت کی۔ شبلی فراز نے ‏بتایا کہ الحمدللہ میں خیریت سےہوں حملےمیں ڈرائیور شدیدزخمی ہے۔

وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی شبلی فراز نے کہا ہے کہ حملہ آور وں نے کالے جھنڈے اٹھائے ‏ہوئے تھے فائرنگ ہوئی ، پتہ نہیں کیسے بچ گئے میرا ڈائیور زخمی ہے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوے وفاقی وزیرشبلی فراز نے کہا کہ کوہاٹ اپنا ووٹ کاسٹ کرنے ‏گیا تھا تو واپسی پر میری گاڑی پر حملہ کیاگیا فائرنگ ہوتے ہوئے میں نے اپنی آنکھوں سےدیکھا۔

انہوں نے کہا کہ حملہ آوروں کاحلیہ مختلف قسم کاتھاپولیس پربھی حملہ کیا حملہ آوروں کاحلیہ ‏کہیں سےکسی سیاسی جماعت کےکارکنان کانہیں تھا انہوں نےکالے جھنڈے اٹھائے تھے جو کسی ‏سیاسی جماعت کے نہیں لگتے۔

شبلی فراز نے کہا کہ کچھ موٹرسائیکل سواروں نےمیری گاڑی کاپیچھا بھی کیا فائرنگ ہوئی، حملہ ‏آوروں نے میری گاڑی کو ڈنڈوں اور کلہاڑیوں سے مارا پتہ نہیں کیسے بچ گئے ،میرا ڈائیور زخمی ‏ہے اس کی حالت خطرے سے باہر ہے۔