پہلی بار ملکی بھنگ پالیسی منظوری کیلئے وفاقی کابینہ کو ارسال

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

وزارت سائنس اینڈ ٹیکنالوجی نے قومی بھنگ پالیسی تیار کرلی، جسے منظوری کے لیے وفاقی کابینہ کو ارسال کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق وزارت سائنس اینڈ ٹیکنالوجی نے ملکی آمدنی میں اضافے کے لیے قومی بھنگ پالیسی تیار کرلی ہے، جس کے تحت سرمایہ کاروں کی سہولت کے لیے بھنگ ریگولیٹری اتھارٹی بنائی جائے گی.

اس اتھارٹی کے تحت ون ونڈو آپریشن شروع کیا جائے گا۔ وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی شبلی فراز نے کہا ہے کہ بھنگ کی کاشت کے لیے لاتعداد درخواستیں موصول ہو رہی ہیں، پہلے مرحلے میں 100 کمپنیوں کو بھنگ کی کاشت کے لائسنس جاری کیے جائیں گے۔

انہوں ںے بتایا کہ بھنگ پالیسی اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ مشاورت کے بعد تشکیل دی گئی، اس پالیسی کی تیاری میں وزارت تعلیم، کامرس، زراعت اور انسداد منشیات سے مشاورت کی گئی، بھنگ کی کاشت کے ایریا کے گرد باؤنڈری وال اور فیلڈ میں کیمرے لگائے جائیں گے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ عالمی سطح پر بھنگ کی 100 ارب سے زائد مالیت کی مارکیٹ ہے، بھنگ پالیسی میڈیکل اور انڈسٹریل کاشت کے لیے بنائی گئی ہے، اس کی کاشت سے ادویات اور ٹیکسٹائل کی امپورٹ کم ہوگی۔