سال2021: پاکستان میں نمایاں کارنامے سرانجام دینے والی شخصیات

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

پاکستان میں جہاں ایک طرف سیاسی اور معاشی معاملات میں انتشار کا عالم ہے تو دوسری جانب ایسے لوگ بھی ہیں جنہوں نے اپنی زندگی میں ایسے کارہائے نمایاں سرانجام دیے جس سے دنیا بھر میں وطن عزیز کا مثبت تاثر ابھر کر سامنے آیا۔

ان میں سے چند نمایاں نام ایسے ہیں جن کی ماہرانہ کارکردگی پر قوم کو فخر ہے اور ہم آج اس رپورٹ میں ان ہی شخصیات کا تفصیلی ذکر کریں گے۔

ڈاکٹر ثانیہ نشتر، چیئرپرسن احساس پروگرام

ڈاکٹر ثانیہ نشتر کا نام کسی تعارف کا محتاج نہیں، سماجی تحفظ اور تخفیفِ غربت پر وزیرِاعظم کی خصوصی معاون کئی لحاظ سے انتہائی اعلیٰ پائے کی رہنما ہیں۔

اپنی زندگی میں اُنہوں نے جو بے مثال کامیابیاں حاصل کی ہیں کوئی بھی انسان اُن کا محض خواب ہی دیکھ سکتا ہے۔ سرکاری اداروں، سول سوسائٹی اور بین الاقوامی تنظیموں سمیت ہر طرح کے منفرد تجربے کی بدولت وہ پاکستان کے موجودہ حالات میں ایک کلیدی کردار ادا کر رہی ہیں۔

عدنان ملک 

عدنان ملک پاکستان کے وہ بہادر سپوت ہیں جنہوں نے سیالکوٹ فیکٹری میں سری لنکن باشندے پریانتھا کمارا کو مشتعل ہجوم سے بچانے کی کوشش کی۔

اپنی اس کوشش میں وہ پریانتھا کمارا کو بچا تو نہ سکے لیکن اپنی جانب خطرے میں ڈال کر مقتول منیجر کی جان بچانے کی کوشش کرتے رہے۔

وزیراعظم پاکستان عمران خان نے عدنان ملک کی اس کاوش کو سراہتے ہوئے ان کو بطور خاص وزیراعظم ہاؤس مدعو کیا اور ان کیلئے تمغہ شجاعت کا اعلان کیا۔

کپتان بابر اعظم

قومی کرکٹ ٹیم کے موجودہ کپتان بابراعظم کو دنیا کے بہترین بلے بازوں میں شمار کیا جاتا ہے، بابر اعظم کی حالیہ ہونے والے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں کارکردگی سب کے سامنے ہے وہ اپنی ٹیم کو کامیابی کے ساتھ اور مسلسل 5 میچوں میں ناقابل شکست رہتے ہوئے قومی ٹیم کو سیمی فائنل تک لے کرگئے۔

یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ ورلڈ کپ میں روایتی حریف بھارت کیخلاف بہترین حکمت عملی کا مظاہرہ کرتے ہوئے قومی ٹیم نے دس وکٹوں سے عبرتناک شکست دی تھی۔

بابراعظم ون ڈے کرکٹ میں تیز ترین ایک ہزار رنز بنانے والے مشترکہ طور پر پہلے، تیز ترین دو ہزار ون ڈے رنز بنانے والے مشترکہ طور پر دوسرے اور تیز ترین 3000 ون ڈے رنز بنانے والے دنیا کے دوسرے بلے باز ہیں۔

اس کے علاوہ دنیا کے کسی بھی بلے باز کی جانب سے پہلے25 ون ڈے اننگز کے بعد سب سے زیادہ رنز بنانے کا ریکارڈ بھی ان کے پاس ہے۔

کوہ پیما محمد علی سدپارہ

کوہ پیمائی میں پاکستان کا سب سے بڑا نام محمد علی سدپارہ ہے جنہوں نے سال2016 میں دنیا کی نویں بلند ترین چوٹی نانگا پربت کو کامیابی سے سر کیا۔

دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی کے ٹو موسم سرما میں سر کرنے کی دھن نے متعدد کوہ پیماؤں کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔ کوہ پیما محمد علی سدپارہ کا نام بھی ان ہی جانبازوں میں شمار ہوتا ہے۔

45سالہ محمد علی سدپارہ موسم سرما میں کے ٹو سر کرکے تاریخ رقم کرنے کیلئے رواں سال ماہ فروری میں گھر سے نکلے تھے۔ اس مہم میں ان کے ہمراہ اُن کے صاحبزادے ساجد سدپارہ بھی موجود تھے۔

قومی ہیرو اور کے ٹو پہاڑی سر کرنے کے دوران لاپتہ ہوگئے تھے، کوہِ پیما محمد علی سدپارہ کی لاش 26 جولائی کو ملی، قوم کے اس ہیرو کو پہاڑوں کے درمیان دفن کردیا گیا۔

ایتھلیٹ ارشد ندیم 

پاکستان کے24 سالہ ایتھلیٹ ارشد ندیم نے ٹوکیو اولمپکس میں جیولن تھرو کے فائنل راؤنڈ کے لیے کوالیفائی کرتے ہوئے دنیا بھر میں پاکستان کا نام روشن کیا۔

رواں سال 4اگست کو ہونے والے مقابلے میں ارشد ندیم نے85.16 میٹر کے فاصلے پر جیولن پھینک کر گروپ بی میں پہلی پوزیشن حاصل کی۔

تاہم ٹوکیو اولمپکس کے فائنل میں ارشد ندیم جیولین تھرو کے مقابلے میں میڈل کی دوڑ سے باہر ہوگئے، ارشد ندیم نے اپنی پہلی تھرو 82.40 میٹر دور پھینکی تاہم میڈل کے حصول کی جدوجہد کو اس وقت دھچکا لگا جب وہ دوسری تھرو میں فاؤل کرگئے۔