طورخم : شکرقندی کی آڑ میں ایک کروڑ روپے کی اشیاء کی اسمگلنگ ناکام

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

کسٹمز حکام نے طورخم کے راستے شکر قندی کی آڑ میں ایک کروڑ روپے سے زائد مالیت کا کپڑا، بھارتی اوریجن حقہ، چوہے مار ادویات، فائر کریکر، چیونگ ٹوبیکو اور ادویات کی اسمگلنگ ناکام بناتے ہوئے ایک ملزم کو گرفتار کرلیا۔

ذرائع کے مطابق افغانستان سے طورخم بارڈر کے راستے پاکستان داخل ہونے والی گاڑی کے اے بی 465 میں ظاہری طور پر شکر قندی لوڈ تھی لیکن اسکینر کے دوران مشکوک اشیاء پائی گئیں.

رپورٹ کے مطابق گاڑی کی مکمل چیکنگ کی گئی تو مختلف اشیا برآمد ہوئیں، جن میں کپڑا، بھارتی اوریجن حقہ، چوہے مار ادویات، فائر کریکر، چیونگ ٹوبیکو اور ادویات سمیت دیگر شامل ہیں۔

ابتدائی تخمینہ کے مطابق گاڑی سے برآمد شدہ اشیاء کی مالیت ایک کروڑ پانچ لاکھ روپے سے زائد ہے، جن پر ڈیوٹی اور ٹیکسوں کی مد میں مجموعی طور پر 78 لاکھ روپے سے زائد کے واجبات بنتے ہیں.

رپورٹ کے مطابق اسمگلنگ میں ملوث شخص گاڑی میں شکر قندی لوڈ ہونا ظاہر کرکے بغیر ڈیوٹی و ٹیکسوں کے اشیاء اسمگل کرنا چاہتا تھا۔

ایف بی آر کے ماتحت ادارے پاکستان کسٹمز نے گاڑی ضبط کرکے ایک ملزم کو گرفتار کرلیا جس کے خلاف ایف آئی آر درج کرکے مزید تحقیقات شروع کردی گئی ہیں۔