قبائلی اضلاع میں کھیلوں کے لئے ایک ارب روپے منظور

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

خیبر پختونخوا حکومت نے ضم ہونے والے قبائلی اضلاع اور سب ڈویژنز میں 3 سالوں کے دوران کھیلوں کی سرگرمیوں کے انعقا د کے لئے ایک ارب روپے منظور کر لئے ہیں، منصوبے کے تحت ایک لاکھ 84 ہزار سے زائد مرد و خواتین کھلاڑیوں کو کھیلوں کی سرگرمیوں میں شامل کیا جائے گا۔

محکمہ کھیل خیبر پختونخوا کے مطابق مذکورہ منصوبہ 7 قبائلی اضلاع میں 6 سب ڈویژنز کیلئے تجویز کیا گیا تھا، منصوبے کے تحت میگا سپورٹس فیسٹیول منعقد کئے جائیں گے جبکہ بین الاضلاعی مقابلے بھی اسی منصوبے کا حصہ ہیں۔

قبائلی اضلاع اور سب ڈویژنز میں یہ منصوبے فروری 2020ء سے شروع کئے جائیں گے اور اگلے تین برس تک جاری رہیں گے ،سپورٹس کے تمام مقابلوں میں خواتین اور مرد کھلاڑی حصہ لیں گے۔

منصوبے کے تحت رواں برس 54 ہزار 341 کھلاڑیوں کو سپورٹس مقابلوں میں شامل کیا جائیگا اور اس پر 25کروڑ روپے خرچ کئے جائیں گے۔

آئندہ برس 2020-2021ء میں 65 ہزار 213 مرد و خواتین کھلاڑی حصہ لیں گے اور ان مقابلو ں پر 37 کروڑ 50 لاکھ جبکہ تیسرے برس یعنی 2021-2022ء میں بھی 65 ہزار 213 کھلاڑیوں کیلئے کھیلوں کی سرگرمیوں کے انعقاد پر 37 کروڑ 50 لاکھ خرچ کئے جائیں گے۔

مجموعی طور پر تین سالوں کے دوران ایک لاکھ 84 ہزار 767 کھلاڑیو ں کیلئے کھیلوں کی سرگرمیوں کے انعقاد پر ایک ارب روپے خرچ کئے جائیں گے۔

محکمہ کھیل ذرائع کے مطابق منصوبے کی منظوری صوبائی ترقیاتی پارٹی نے دے دی ہے جبکہ مالی امور کی کلیئرنس کیلئے محکمہ خزانہ سے رابطہ کی ہدایت کی گئی ہے۔