پاکستان کو سائبر سکیورٹی ماہرین کی ضرورت ہے

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ آج کے دور میں کسی کی پرائیویسی نہیں رہی پورے معاشرے کو ‏انفارمیشن ٹیکنالوجی سے آگاہ ہونے کی ضرورت ہے۔

پاکستان سائبر ہیکاتھان کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صدر مملکت نے کہا کہ پاکستان ڈیجٹیلائز ہوگا ویسے ‏ویسے سائبر حملے بڑھ جائیں گے پاکستان کو سائبر سکیورٹی ماہرین کی ضرورت ہے۔

صدرمملکت نے کہا کہ نئی نسل دنیا میں ہونے والی تبدیلیوں کو بہتر طور پر سمجھ رہی ہے آئی ٹی کے شعبہ ‏میں ترقی سے پاکستان کی آئی ٹی کی پیداوار اور برآمدات میں اضافہ ہوگا اداروں کو ڈیجٹیلائز کرنے کے ساتھ ‏ساتھ سائبر سکیورٹی کی جانب بھی اپنی توجہ مبذول کرنی چاہئے۔

ڈاکٹر عارف علوی کا کہنا تھا کہ ہونہار طلبہ کو 50 ہزار شکالر شپس دی جارہی ہیں سائبر حملے بڑھنے کے باوجود ‏دنیا کے پاس ٹیکنالوجی کے سوا کوئی آپشن نہیں ہے بھارت ہمارے معاشرے میں افراتفری پھیلانا چاہتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا پر فیک نیوز چلائی جاتی ہیں ایف بی آر اور نیشنل بینک پر سائبر حملہ اس کی ‏مثال ہے مالیاتی اداروں، ٹیلی کام اور یوٹیلی اداروں کا ڈیٹا بھی محفوظ نہیں ہے۔