پاکستان میں کورونا مثبت کیسز کی شرح ایک فیصد سے کم

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

پاکستان میں کورونا مثبت کیسز کی شرح ایک فیصد سے کم پر برقرار ہے، ایک دن میں مزید 9 اموات اور 414کیسز رپورٹ کئے گئے۔

تفصیلات کے مطابق نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے ملک میں جاری کورونا وبا کی صورتحال کے تازہ اعدادو شمار جاری کردیئے ہیں ، جس میں بتایا گیا کہ ملک میں 24گھنٹےمیں کورونا سے مزید 9 افراد انتقال کرگئے ، جس کے بعد کورونا وائرس سے مجموعی اموات 28 ہزار 737 ہوگئیں۔

این سی اوسی کا کہنا تھا کہ 24 گھنٹے میں 42ہزار381 کورونا ٹیسٹ کئے گئے ، جس میں سے 414 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ، اس دوران کورونا کے ٹیسٹ مثبت آنے کی شرح 0.97 فیصد رہی۔

نیشنل کمانڈاینڈ آپریشن سینٹر نے بتایا کہ ملک بھر میں کورونا کے 896 زیرعلاج مریض انتہائی نگہداشت میں ہیں جبکہ ملک بھر میں کورونا سے متاثر ہونے والوں کی مجموعی تعداد 12 لاکھ 85 ہزار 254 تک پہنچ گئی ہے۔

اعدادو شمار کے مطابق سندھ میں کورونا کیسز کی تعداد چار لاکھ 75 ہزار820 ، پنجاب میں 4 لاکھ 43 ہزار 185، خیبرپختونخوا میں ایک لاکھ 79 ہزار 075 اور بلوچستان میں 33 ہزار484 ہے جبکہ اسلام آباد میں ایک لاکھ 7 ہزار 722، گلگت بلتستان میں 10 ہزار412 اور آزاد کشمیر میں 34 ہزار556 کیسز سامنے آچکے ہیں۔

خیال رہے کورونا کی نئی قسم اومیکرون سے نمٹنے کیلئے حکومت پاکستان نے آج سے بوسٹر ڈوز آج سے لگانے کا فیصلہ کیا ہے ، بوسٹر ڈوز مرحلہ وار لگائی جائے گی، پہلے ہیلتھ کیئرورکرز اور 50سال سے زائد عمر والوں کو ڈوز لگائی جائے گی۔

یکم دسمبر سے بوسٹر ڈوز لگانے کا فیصلہ

وفاقی حکومت نے کورونا کی نئی قسم کے خدشات کو مدنظر رکھتے ہوئے ویکسی نیشن سے متعلق بڑا فیصلہ کر ‏لیا۔

ذرائع کے مطابق حکومت نے کوروناویکسین کی بوسٹر ڈوز کےآغاز کا فیصلہ کیا ہے اور اس حوالے سے ابتدائی ‏حکمت عملی تیار کر لی گئی ہے۔

کوروناویکسین بوسٹر ڈوز لگانےکا آغاز یکم دسمبر سے ہو گا۔ بوسٹرڈوز مرحلہ وارلگائی جائےگی پہلے مرحلے میں ‏ہیلتھ کیئر ورکرز کو بوسٹرڈوز لگائی جائےگی۔

پہلے فیز میں50سال سے زائد عمر والے اور کمزور قوت مدافعت والے افراد کو بوسٹر ڈوز لگائی جائےگی۔ پہلے ‏مرحلے میں کورونا ویکسین بوسٹر ڈوز لگوانا لازمی نہیں ہوگا۔ بوسٹر ڈوز کیلئےویکسین کاانتخاب لگوانےوالےکی ‏صوابدید ہو گی۔

واضح رہے کہ چند روز قبل سندھ حکومت نے تمام بالغ افراد کو کورونا ویکسین کی بوسٹر ڈوز لگانے کا فیصلہ کیا ‏تھا۔