ٹانــــک : ٹور دی وزیرستان سائیکل ریس کے دوسرے مرحلے کا آغاز

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

ٹانــــک ٹور دی وزیرستان تین روزہ قومی سائیکل ریس ریلی کے دوسرے مرحلے کا آغاز ٹانک سے کردیا گیا

ڈھول کی تھاپ اور گھوڑوں کے رقص پر قومی سائیکلسٹ کو سٹارٹنگ پوائنٹ سے گومل زام ڈیم کی طرف روانہ کیا گیا جس میں سائیکلسٹ ٹانک سے 68 کلو میٹر کافاصلہ طے کرکے گومل زام ڈیم پہنچیں گے.

جنوبی وزیرستان سے دنیا کو امن و خوشحالی کا پیغام دینے سمیت کھیلوں اور سیاحتی سرگرمیوں کو فروغ دینے کےلئے خیبر پختون خواہ کلچر اینڈ ٹورزم اتھارٹی نے انتظامیہ کے باہمی اشتراک سے تین روزہ دی ٹور وزیرستان قومی سائیکل ریس ریلی کا انعقاد کیا گیا یے.

ریلی کو تین مرحلوں میں تقسیم کیا گیا ہے پہلا مرحلہ ڈیرہ سے ٹانک تک کا تھا جو مکمل ہو گیا جبکہ دوسرے مرحلے کا آغاز بروز سوموار کو ٹانک جہاز گراؤنڈ کے مقام سے کیا گیا

اس موقع پر سیکٹر ہیڈ کوارٹر ساؤتھ اور 25 سندھ رجمنٹ کی جانب سے سائیکلسٹ کو الوداع کرنے کے لئے رنگا رنگ تقریب کا انعقاد کیا گیا تھا جس میں اسسٹنٹ کمشنر عدنان خٹک، سول سوسائیٹی،معززین علاقہ صحافیوں اور شہریوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی.

سٹارٹنگ پوائینٹ پر سائیکلسٹ کے استقبال کے لئے سکولوں کے بچے بھی موجود تھے سیکٹر کمانڈر ساؤتھ بریگیڈئیر نیک نام محمد بیگ اور کمانڈنگ آفیسر 25 سندھ رجمنٹ لیفیٹنٹ کرنل شیر عالم نے فیتہ کاٹ کر ریس کے دوسرے مرحلے کا آغاز کیا.

اس موقع پر سکولوں کے بچوں نے قومی ریس میں حصہ لینے والے سائیکلسٹ پر گل کاری کی جبکہ سائیکلسٹ کو گھوڑوں کے رقص اور ڈھول کی تھاپ پر گومل زام ڈیم کی طرف راوانہ کیا.

ریس کا آخری اور تیسرا مرحلہ گومل زام ڈیم سے شروع ہوگا اور وانا پر اختتام پذیر ہوگا جہاں پر سائیکلسٹ میں انعامات تقسیم کئے جائیں گے.

دوسرے مرحلے کے آغاز پر قومی ریس کا حصہ بننے والے سائیکلسٹ کا کہنا تھا کہ ریس کا بنیادی مقصد دنیا کو یہ پیغام دینا ہے کہ جنوبی وزیرستان کےلوگ پر امن اور انتہائی مہمان نواز ہیں.

دی ٹور وزیرستان ریلی علاقہ کی ترقی و خوشحالی کےلئے نیک شگون ثابت ہوگی جس سےایک طرف امن کا پیغام جائیگا جبکہ دوسری طرف سیاحت اور کھیلوں کی سرگرمیوں کو پروان چڑھانے میں مدد ملے گے.